In one week, the epidemic in Pakistan increased by 30 Percent
کیپشن:   فائل فوٹو
05 مارچ 2021 (11:18) 2021-03-05

اسلام آباد: پاکستان میں عالمی وبا کا خطرہ ایک بار پھر سر اٹھانے لگا ہے۔ اعدادوشمار کے مطابق جب سے پابندیوں میں نرمی کی گئی ہے، وبائی مرض کے کیسز بڑھنے کی شرح بڑھ گئی ہے اور اس میں 30 فیصد کا اضافہ دیکھا گیا ہے۔

طبی ماہرین نے نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ وائرس کے بڑھتے کیسز کا فوری طور پر نوٹس لیتے ہوئے سماجی پابندیوں کو دوبارہ نافذ کرے تاکہ اس مرض کو دوبارہ پھیلنے سے روکا جا سکے۔

خیال رہے کہ گزشتہ ماہ چو بیس فروری کو نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر (این سی او سی) تمام سماجی سرگرمیوں کو بحال کرنے کی اجازت دیتے ہوئے دفاتر، سکولز اور دیگر جگہوں پر عائد پابندیوں کو ہٹانے کا فیصلہ کیا تھا۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر نے تمام کاروباری سرگرمیوں کی اجازت دیتے ہوئے ان پر عائد وقت کی پابندی کو ختم کر دیا تھا۔ جبکہ ملک بھر کے تمام تعلیمی اداروں کو بھی 5 دن کھلے رکھنے کی اجازت دیدی گئی تھی۔

اس کے علاوہ اجلاس میں مزارات، شادی کی تقریبات اور سینما ہالز کو بھی 15 مارچ سے کھولنے کی اجازت دی جا چکی ہے۔ تاہم ریسٹورنٹس کو انڈ ڈور ڈائننگ کی اجازت دینے کا فیصلہ 10 مارچ کو ہونے والے اجلاس میں کیا جائے گا۔

ادھر پاکستان سپر لیگ کے کھلاڑیوں میں عالمی وبا کے بڑھتے کیسز کی وجہ سے پاکستان کرکٹ بورڈ نے اسے ملتوی کر دیا ہے۔ ٹورنامنٹ کو دوبارہ سے شروع کرنے کا فیصلہ وبائی مرض کی صورتحال کو دیکھتے ہوئے کیا جائے گا۔


ای پیپر