If the Prime Minister fails to get a vote of confidence, his power will end
کیپشن:   فائل فوٹو
05 مارچ 2021 (10:23) 2021-03-05

اسلام آباد: مسلم لیگ (ن) کے اہم رہنما شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان نے پارلیمنٹ سے اعتماد کا ووٹ حاصل کر لیا تو ٹھیک، ورنہ ان کا اقتدار فارغ ہے۔

یہ بات انہوں نے ایک نجی ٹیلی وژن سے گفتگو کرتے ہوئے کہی۔ شاہد خاقان عباسی نے دعویٰ کیا ہے کہ حکومتی صفوں میں بیٹھے کم از کم 30 سے زیادہ اراکین نے مسلم لیگ (ن) سے رابطہ کیا تھا۔

انہوں نے ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم عمران خان پارلیمنٹ میں اپنی اکثریت کھو چکے ہیں۔ انہوں نے بنیادی نقطہ اٹھایا کہ اگر کسی وزیراعظم نے ایوان سے اعتماد کا ووٹ لینا ہو تو اسے صدر مملکت کو خط لکھنا پڑتا ہے کہ میں اکثریت کھو چکا ہوں۔

شاہد خاقان عباسی کا کہنا ہے کہ ہماری اور دیگر اپوزیشن جماعتوں کی نظر میں وزیراعظم عمران خان پہلے سے ہی فارغ ہو چکے ہیں لیکن اگر وہ ایوان سے اپنے لئے اعتماد کا ووٹ حاصل کرنے میں ناکام رہے تو وہ اقتدار سے سچ مچ فارغ ہو جائیں گے۔

سابق وزیراعظم نے پروگرام کے دوران گفتگو کرتے ہوئے بڑا دعویٰ کیا کہ تحریک انصاف کے 30 سے زیادہ اراکین نے رابطہ کیا ہے، ان میں سے چند ہی نئے الیکشن میں ٹکٹس کے متمنی ہیں تاہم زیادہ تر نے حکومت کی ناکامی اور ناکام پالیسیوں کا ہی تذکرہ کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم نے سینیٹ الیکشن میں کسی حکومتی جماعت میں شامل رکن اسمبلی کو پیسے نہیں دیئے اور نہ ہی کسی نے ہم سے اس قسم کا مطالبہ ہی کیا تھا۔

خیال رہے کہ وزیراعظم عمران خان نے سینیٹ الیکشن میں عبدالحفیظ شیخ کی شکست کے بعد ایوان سے اعتماد کا ووٹ لینے کا فیصلہ کیا ہے۔ قومی اسمبلی کا اجلاس ہفتے کے روز ہوگا۔


ای پیپر