دھرنا کس نے اور کیوں ختم کرایا ؟مولانا فضل الرحمن نے خاموشی توڑ دی
05 مارچ 2020 (18:17) 2020-03-05

اسلام آباد :سربراہ جمیعت علما ئے اسلام (ف)مولانا فضل الرحمن نے خاموشی توڑتے ہوئے کہا کہ اب وہ باتیں سامنے لانی پڑیں گی جس کی وجہ سے دھرنا ختم کیا گیا تھا ۔

مولانا فضل الرحمن کا میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئےکہنا تھا کہ پاکستان میں حالات ٹھیک نہ ہوئے تو انقلاب آسکتا ہے، ہمارے کاروباری افراد پیسہ نکال کرباہرجا رہے ہیں، معیشت کی تباہی سے جغرافیہ تبدیل ہوجاتے ہیں،انہوں نے کہا کہ ہماری سوچ ملک اور ریاست کو بچانا ہے جب کہ اپوزیشن متحد ہوتی ہے تو حالات بہتر ہوسکتے ہیں، اپوزیشن کی بڑی جماعتوں کو بڑا کردار ادا کرنا ہوگا۔

مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ ہم سے معاہدہ کرنے والے اپنا کردارادا کریں، ہمیں مجبوراً وہ وعدے عوام کے سامنے لانے پڑیں گے جس پر ہمارا دھرنا ختم کرایا گیا، جس نے کہا تھا کہ جنوری آخری مہینہ ہو گا اُن کو جلد سامنے لائیں گے، ہم نے کسی اورکی بات مانی ہے تاہم دکھایا ق لیگ کو گیا ہے، ق لیگ کے پاس کوئی اختیار ہے ہی نہیں۔

سربراہ جمعیت علمائے اسلام (ف) کا کہنا تھا کہ ہمارے نظام میں ایسے عناصر موجود ہیں جو ختم نبوت کے معاملے پر حملہ کرتے ہیں جب کہ بلدیاتی الیکشن سے مُلک میں انارکی پھیل جائے گی، بلدیاتی انتخابات کو کسی صورت قبول نہیں کریں گے، ہم صرف جنرل الیکشن کو تسلیم کریں گے۔


ای پیپر