خان کی تیسری شادی کے وقت اہلیہ عدت میں تھیں ،صحافی کا ایک بار پھر بڑا دعویٰ
05 مارچ 2018 (20:44) 2018-03-05

لاہور :عمران خان کی شادیوں کے حوالے سے خبریں ہمیشہ میڈیا کی زینت بنتی رہی ہیں ۔جس میں اکثر خبروں کا موضع صرف یہ ہی رہا کہ شادی ہو گئی ہے یا نہیں ہوئی ۔شاید اس کا پس منظر کچھ اور ہی ہو تا ہے جس میں وقت پر لوگوں نہ بتا نا یا شادی کی رسم کا پہلے ہو جانا اور میڈیا پر اطلاعات کا بازار پہلے گرم ہو جا تا ہے اسی سلسلے میں عمران خان کی تیسری شادی بھی ایسے ہی خبروں میں رہی ۔

صحافی کا ایک بار پھر دعویٰ کیا ہے کہ چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کا بشریٰ بی بی سے نکاح یکم جنوری کو ہوا اور اس وقت خان صاحب کی اہلیہ عدت میں تھیں۔عمر چیمہ نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ بشریٰ بی بی کی عدت کو چھپانے کے لیے 18 فروری کو تصاویر جاری کی گئیں اور اس جھوٹ کو چھپانے کے لیے عمران خان کو نکاح خواں کو خاموش رکھنے کا چیلنج درپیش تھا اسی لیے انہوں نے نکاح خواں مفتی سعید سے اپیل کی کہ وہ میڈیا پراس حوالے سے کوئی بیان نہ دیں۔

رپورٹ کے مطابق عمران خان نے مفتی سعید سے کہا کہ آپ کو ہر حال میں میرے وقار کو بحال رکھنا ہے جس پر مفتی سعید بولے کہ عمران انہیں جواب دینے سے نہ روکیں کیوں کہ وہ رازداری کی بات تو مان ہی چکے ہیں۔رپورٹ کے مطابق ایک موقع پر بشریٰ بی بی کی معتمد خاص فرح جبیں نے راز کو راز رکھنے پر عمران خان سے مفتی سعید کی تعریف کی جس پر عمران خان فخر سے بولے کہ ا?خر وہ ہمارے مفتی صاحب ہیں۔

اس حوالے سے بشریٰ بی بی کی قریبی دوست اور ان کے نکاح میں شریک فرح جبین سےرابطہ کیا گیا تو انہوں نےکسی تبصرے سے انکار کردیا۔واضح رہے کہ فرح جبین نکاح کے اصل دن یعنی یکم جنوری 2018 اورمیڈیا کے لیے تصاویر جاری کرنے والے دن یعنی 18فروری 2018 کو ہونیوالی دونوں تقاریب میں موجود تھیں۔

مانیکا فیملی ذرائع بتاتے ہیں کہ طلاق 14 نومبر کو ہوئی جس کی تصدیق فرح جبین نے بھی کی اور بتایا کہ عدت 14فروری کو مکمل ہوئی۔رپورٹ میں مفتی سعید کے حوالے سے لکھا گیا ہے کہ نکاح کے فوراً بعد عمران خان نےجہانگیر ترین کو فون کر کے کہا کہ انہوں نے نکاح اس لیے کیا تاکہ ترین اگلا الیکشن جیت جائیں۔تاہم جہانگیر ترین نے کسی بھی کوئی ٹیلی فونک بات چیت کی تردید کی اور کہا کہ عمران خان نے میسج کیاتھا جس میں الیکشن کا کوئی ذکر نہیں تھا۔دعوت ولیمہ میں عمران خان نے بشریٰ بی بی کی ملاقات جہانگیر ترین سے کروائی تو بشریٰ بی بی نے وضاحت کی کہ وہ بتانا چاہتی ہیں کہ وہ کوئی جادوگرنی نہیں ہیں۔جہانگیر ترین نے اس بارے میں سوال پر کہا کہ نجی بات چیت کے بارے میں پوچھنامناسب نہیں اور وہ ایسی کسی بات کی تردید کرتے ہیں۔


ای پیپر