سینٹ الیکشن ،ایم کیو ایم برائے فروخت نہیں ،ووٹرز سے معافی مانگتے ہیں:فیصل سبزواری
05 مارچ 2018 (20:31)

کراچی: ایم کیو ایم پاکستان کا شیرازہ بکھرنے کے بعد بہت سی مشکلات کا سامنا کر رہی ہے ۔ ایم کیو ایم اراکین کو بھی سمجھ نہیں آر ہی کہ وہ کیا کریں اور کس کی بات سنیں ۔ایسے میں سینٹ الیکشن سندھ میں بدلتی صورتحال نے ایم کیو ایم کے کئی ایک اہم چہروں کو بے نقاب بھی کر دیا ۔اس سلسلے میں سندھ اسمبلی میں ایم کیو ایم کے ارکان اسمبلی کا اجلاس ہو ا جس میں اپوزیشن لیڈر خواجہ اظہار الحسن ،سید سردار احمد اور دیگر ارکان شریک ہوئے جب کہ ایم کیوایم پی آئی بی کے حمایت یافتہ بیشتر ارکان نے شرکت نہیں کی۔اجلاس میں ارکان کے درمیان تندوتیز جملوں کا تبادلہ ہوا ،شرکاء نے ایک دوسرے پر الزامات لگائے او وضاحتیں پیش کیں۔

ایم کیوایم پاکستان (بہادرآباد گروپ) کے رہنما فیصل سبزواری نے سینیٹ انتخاب میں پارٹی ارکان کی جانب سے اپنے امیدواروں کے بجائے دیگر سیاسی جماعتوں کے ارکان کو ووٹ دینے پر معافی مانگ لی۔اس موقع پر فیصل سبزواری کا کہنا تھا کہ ہماری باجیوں نے ایم کیوایم امیدواروں کوووٹ نہیں دیا جب کہ چند لوگوں نے تنظیمی ہدایت کے برعکس ووٹ دیا،اس پر ہم ایم کیوایم کے ووٹرزسے معافی مانگتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ایم کیوایم برائے فروخت نہیں اب مزید جگ ہنسائی نہ کرائی جائے۔

واضح رہے کہ سینیٹ کے انتخاب میں ایم کیوایم کے واحد امیدوار فروغ نسیم نے کامیابی حاصل کی، ان کے سوا پارٹی کا کوئی امیدوار کامیاب قرار نہیں پایا اور اس کی وجہ ارکان اسمبلی کی اپنی پارٹی کے امیدواروں کے بجائے دیگر امیدواروں کو ووٹ دینا ہے۔


ای پیپر