سری دیوی کی ہلاکت.... ایک معمہ!
05 مارچ 2018 (20:04) 2018-03-05

موت کی وجہ ....ہارٹ اٹیک، باتھ ٹب کے پانی میں ڈوبنے، نشے کی زیادتی، خودکشی یا قتل؟

مدثر نذر قریشی

اس دُنیاکی سب سے بڑی حقیقت موت ہے جس سے کسی ذی روح کو فرار نہیں، ہر انسان نے موت کا ذائقہ چکھنا ہے، کسی نے جلد توکسی نے بدیر لیکن مرنا سب نے ہے۔کوئی کسی حادثے میں موت کی وادی میں چلاجاتا ہے،کوئی بیماری کی حالت میں توکوئی بغیرکسی بہانے کے اورکوئی خودکشی کے ذریعے جان دے دیتا ہے۔اگردُنیا کی مشہور ومعروف آنجہانی شخصیات کا ذکر کریں جو سالِ رواں کے آغاز سے اب تک موت کی وادی میں جاچکی ہیں تو متعدد نام سامنے آجائیں گے لیکن ہم آج بالی وڈ کی لیجنڈ، خوبصورت اور معروف اداکارہ سری دیوی کی بات کریں گے جو گزشتہ ہفتے دبئی میں پُراسرار طور پر ہلاک ہو گئی ہیں۔ پُراسرار اس لےے کہ آنجہانی لیجنڈری اداکارہ سری دیوی کی موت کے حوالے سے ہر روز نئے انکشافات سامنے آرہے ہیں، سب سے پہلی خبر کے مطابق وہ دل کا دورہ پڑنے سے ہلاک ہوئیں لیکن فرانزک رپورٹ کے مطابق وہ واش روم میں باتھ ٹب میں بے ہوش کے بعد ڈوبنے سے ہلاک ہوئیں، ایک خبر کے مطابق وہ شراب (نشے) کی زیادتی کے باعث بے ہوش ہوئیں، یہ بھی ہوسکتا ہے کہ انہوں نے خودکشی کی ہو یا انہیں کسی نے قتل کیا ہو کیونکہ اداکارہ بالکل صحت مند تھیں اور ایسے اچانک ان کی موت نے یقینا کئی سوالوں کو جنم دیا ہے۔

بھارتی سیاستدان امرسنگھ کا بیان

اسی طرح ایک بھارتی سیاستدان امر سنگھ نے بھی اداکارہ سری دیوی کی موت کے حوالے سے نیا بیان دیتے ہوئے کہا ہے کہ اگر بونی کپور سری دیوی کو اکیلا چھوڑنے کی بڑی غلطی نہ کرتے تو یقینا آج وہ زندہ ہوتیں۔ خیال رہے کہ گزشتہ ہفتے دبئی میں وہ بھتیجے کی شادی میں شرکت کیلئے گئی تھیں جہاں اچانک میڈیا میں اداکارہ سری دیوی کی حرکت قلب بند ہونے کے باعث انتقال کی خبریں گردش کرنے لگیں۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق شادی کی تقریب کے بعد سری دیوی کے شوہر بونی کپور اور بیٹی جھانوی کپور بھارتی سیاستدان اور کپور فیملی کے قریبی دوست امرسنگھ کے ہمراہ اُترپردیش میں ہونے والی یوپی انویسٹرز سمٹ میں شرکت کرنے کیلئے واپس بھارت آگئے تھے، جبکہ سری دیوی دبئی میں اکیلی تھیں۔ یہی وجہ ہے کہ سیاستدان امر سنگھ کا کہنا تھا کہ بونی کپور نے واپس بھارت آکر بہت بڑی غلطی کی تھی انہیں سری دیوی کو اکیلا نہیں چھوڑنا چاہئے تھا، گو کہ بونی کپور واپس دبئی چلے گئے تھے لیکن اگر ہم وہاں ہوتے تو شاید یہ حادثہ روکا جاسکتا تھا۔ امرسنگھ نے سری دیوی کے حوالے سے مزید انکشافات کرتے ہوئے کہاکہ سری دیوی کبھی بھی بہت زیادہ نشہ آور مشروب نہیں پیتی تھیں۔

بالی وڈ کے معروف فنکاروں کی اموات

بالی وڈ میں تھوڑے ہی عرصے کے دوران معروف اور سینئر فنکاروں کی لگاتار اموات سے بالی وڈ فلم انڈسٹری ویران ہوتی جارہی ہے، کوئی فنکار حادثاتی موت مرا ہے تو کوئی قتل۔ اوم پوری، ونود کھنہ، ششی کپور، دیو آنند، اداکارہ ریمالاگو، اداکار رزاق خان، اندر کمار سمیت کئی دیگر فنکار شامل ہیں اور اب اداکارہ سری دیوی کی موت یقینا فلم بینوں اور ان کے پرستاروں کے لےے ایک بڑا دھچکا ہے۔

سری دیوی کو ہوا کیا تھا؟

55سالہ بالی وڈ اداکارہ سری دیوی کے دبئی میں اچانک انتقال سے سبھی حیران ہوئے، ان کے ساتھ ہوٹل کے کمرے میں آخر ہوا کیاتھا؟ پہلے ان کی موت کی وجہ دل کا دورہ قراردیاجارہا تھا جبکہ ان کے گھر والوں کے مطابق انہیں دل کا کوئی عارضہ لاحق نہیں تھا، یہی وجہ ہے کہ پوری بالی وڈ فلم انڈسٹری اور ان کے پرستار حیران ہیں کہ آخرسری دیوی کے ساتھ ایسا کیا ہوا کہ وہ چند لمحوں میں اپنے چاہنے والوں کو سوگوار چھوڑ کر ہمیشہ کیلئے اس فانی دنیا سے چلی گئیں۔ بھارتی میڈیا کے مطابق اداکارہ سری دیوی اپنے شوہر بونی کپور اور بیٹی خوشی کپور کے ساتھ اپنے بھتیجے کی شادی میں شرکت کیلئے دبئی گئی تھیں۔ شادی میں شرکت کے بعد بونی کپور اورخوشی کپور واپس ممبئی آگئے تھے جبکہ سری دیوی اپنی بہن سری لاتھا کے ساتھ کچھ وقت گزارنے کیلئے دبئی میں ہی موجود تھیں۔ سری دیوی دبئی کے ایمریٹس ٹاور ہوٹل میں قیام پذیر تھیں جہاں ان کی موت سے ایک دن قبل بونی کپور نے پہنچ کر اپنی اہلیہ کو سرپرائز دیا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق بونی کپور تقریباً ساڑھے 5بجے شام ہوٹل پہنچے تھے اور انہوں نے سری دیوی کو رات کے کھانے کیلئے مدعو کیا تھا۔ دونوں کے درمیان تقریباً 15 منٹ تک بات چیت کا سلسلہ جاری رہا، اس کے بعد سری دیوی واش روم گئیں۔ جب 15 منٹ بعد بھی وہ واش روم سے واپس نہیں آئیں تو بونی کپور کو تشویش ہوئی اور انہوں نے دروازہ کھٹکھٹا کر سری دیوی کو آواز دی لیکن سری دیوی کی جانب سے جب کوئی ردّعمل سامنے نہیں آیاتو انہوں نے دروازہ توڑ دیا اور اندر داخل ہوگئے جہاں انہوں نے سری دیوی کی لاش باتھ ٹب کے اندر دیکھی بعدازاں انہوں نے پہلے اپنے دوست کو فون کیا جس نے پولیس اور طبّی عملے کو فون کرکے تمام صورتحال سے آگاہ کیا۔ پولیس اور طبّی عملے نے فوراً سری دیوی کو ہسپتال منتقل کیا جہاں ان کی موت کی تصدیق کردی گئی۔

میڈیا حلقوں کے مطابق

میڈیا حلقوں میں یہ بھی کہا جارہا ہے کہ سری دیوی کی لاش بونی کپور نے نہیں بلکہ ہوٹل کے سٹاف نے برآمد کی تھی۔ سری دیوی نے ہوٹل سٹاف سے پانی منگوایا تھا جب ان کے لئے پانی لے جایاگیا تو انہوں نے دروازہ نہیں کھولا جس کے بعد دروازہ توڑ کر ان کی لاش برآمد کی گئی۔

فرانزک رپورٹ

بھارتی میڈیا میں چلنے والی متضاد خبروں کے باعث سری دیوی کی موت پر شکوک وشبہات کا اظہار کیا جارہا تھا تاہم حتمی فیصلے کیلئے فرانزک رپورٹ کا انتظار تھا جو ان کی موت کے 2روز بعد 26فروری کو سامنے آئی۔ خلیجی اخبار کے مطابق سری دیوی کی فرانزک رپورٹ میں انکشاف ہوا ہے کہ ان کی موت باتھ ٹب میں ڈوبنے کے باعث ہوئی۔ فرانزک رپورٹ میں ان کی موت کو حادثاتی قرار دیا گیا ہے۔ خیال رہے کہ بالی ووڈ اداکارہ سری دیوی کا انتقال 24فروری کی رات کو ہوا تھا۔

27فروری تک سری دیوی کی حتمی پوسٹ مارٹم رپورٹ جاری نہیں کی گئی تھی۔ حتمی رپورٹ میں ٹاکساکولوجی کے تجزیوں کے نتائج شامل ہوں گے۔ اسی رپورٹ سے واضح ہو سکے گا کہ دل کے دورے سے ہلاکت اور حادثاتی طور پر ڈوبنے کی رپورٹ (فرانزک رپورٹ) کا آپسی تعلق کیا ہے؟ تاہم متحدہ عرب امارات کے حکام نے سری دیوی کی لاش کی تحویل کا خط بھارتی سفارتخانے اور اہل خانہ کو دے دیا جس میں کہا گیا کہ وہ لاش کو اپنی تحویل میں لے لیں۔

سری دیوی کا فلمی کیریئر

سری دیوی بالی وڈ فلم انڈسٹری کے اُن گنے چنے ناموں میں سے ایک تھی جنہوں نے بہت تھوڑے ہی عرصہ میں اپنی جاندار اداکاری، خوبصورتی، فن اور سخت محنت سے اپنا ایک مقام حاصل کرلیا تھا۔ بلاشبہ ان کا شمار اُس وقت کی بہترین اداکاراﺅں میں ہوتا ہے۔ ان کا مقابلہ زیادہ تر مادھوری ڈکشٹ، جوہی چاولہ، اُرمیلا، منیشا کوئرالہ، روینہ ٹنڈن سمیت کئی دیگر اداکاراﺅں سے تھا۔

شری اماں یانگر آیاپن المعروف سری دیوی 13 اگست 1963ءکو تامل ناڈو میں پیدا ہوئی۔ انہوں نے چار سال کی عمر میں تامل فلم سے بطور چائلڈ سٹار اپنے کیریئر کا آغاز کیا تھا۔ اس فلم میں انہوں نے ایک چھوٹے لڑکے کا کردار ادا کیا تھا۔ تامل اور تیلگو فلم سے وہ ہندی سینما میں آئیں جہاں لوگوں نے انھیں چائلڈ آرٹسٹ کے طور پر فلم ”جولی“ میں دیکھا۔ سری دیوی نے 11 سال کی عمر میں تیلگو فلم میں ایک نابینا لڑکی کا کردار ادا کیا تھا۔

سری دیوی نے 1978ءمیں انہوں نے اپنے پروفیشنل فلمی کیریئر کا آغاز فلم ”سولہواں ساون“ سے کیا تھا۔ سری دیوی کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ وہ ہندی سینما کی ”پہلی سپر سٹار خاتون“ تھیں۔ جب وہ اپنی پہلی ہندی فلم ”سولہواں ساون“ میں بطور ہیروئن آئیں تو اس وقت ان کا وزن 75 کلو گرام تھا۔ اس کے بعد ان کی فلم ”ہمت والا“ آئی اور رفتہ رفتہ انہوں نے اپنی اداکاری کا لوہا منوایا۔ ابتدا میں سری دیوی کی آواز کو تنقید کا نشانہ بنایا گیا جبکہ بعد میں ان کی آواز کئی لوگوں کی آواز بنی۔

فلم ”صدمہ“ میں سری دیوی نے ایک ایسی لڑکی کا کردار ادا کیا جو اپنی یاد داشت کھو بیٹھتی ہے اور جب سٹیشن پر ان کی یادداشت واپس آتی ہے تو وہ اداکار کمل ہاسن کو نظر انداز کر دیتی ہے اور پھر کمل ہاسن بچوں جیسی حرکتیں کرکے انھیں ان کا ماضی یاد دلانے کی کوشش کرتے ہیں۔

سری دیوی کی کامیاب ترین فلموں میں ”چاندنی“ کا بھی شمار ہوتا ہے۔ سری دیوی مختلف کرداروں کو بخوبی ادا کرنے کا ہنر رکھتی تھیں۔ فلم ”لمحے‘ ‘میں وہ اپنی عمر سے دُگنے شخص سے پیار کرتی ہیں جبکہ فلم ”مام“ میں اپنی بیٹی کا ریپ کرنے والوں سے بدلہ لینے کے لیے نکلتی ہیں۔

مشہور ترین فلمیں

ان کی مشہور ترین فلموں میں ”نگینہ‘ ‘، ”خدا گواہ“، ”چاندنی“، ”لمحے“، ”مسٹر انڈیا“ اور ”صدمہ“ شامل ہیں۔ انہوں نے ہندی فلموں کے علاوہ جنوبی ہند کی دیگر زبانوں میں جیسے کہ تامل، تیلیگو، ملیالم اور کنڑ زبانوں کی فلموں میں بھی کام کیا۔گزشتہ سال ریلیز ہونے والی ”مام“ ان کی 300ویں اور آخری فلم تھی، جس میں انہوں نے پاکستانی اداکارہ سجل علی کی ماں کا کردار ادا کیا تھا۔ ”انگلش ونگلش“ کے بعد ”مام“ میں لمبے عرصے کے بعد ان کی دوبارہ اینٹری ہوئی تھی، جس سے لگتا ہی نہیں تھا کہ وہ فلم انڈسٹری کو چھوڑ گئی تھیں۔ اسی طرح سری دیوی نے گزشتہ سال ہی فلموں میں اپنے 50 سال بھی پورے کیے تھے۔

بہترین ڈانسر

سری دیوی بلاشبہ بہترین ڈانسر تھیں۔ رقص کے معاملے میں وہ کسی سے پیچھے نہیں تھیں۔ ان کے بہترین رقص کو ”ہوا ہوائی“، ”میرے ہاتھوں میں نو نو چوڑیاں ہیں“، ”نینو میں سپنا“ اور فلم ”نگینہ“ کے گیتوں میں دیکھا جا سکتا ہے۔ انہوں نے ایک بار اپنے انٹرویو میں بتایا تھا کہ فلم ”نگینہ“ کا کلائمیکس گیت اور ڈانس شوٹ ہونا تھا اور سیٹ ایک ہی دن کے لیے دستیاب تھا۔ اگلے دن صبح انہوں نے جب ڈانس کی شوٹنگ شروع کی اسی کے ساتھ سیٹ توڑنے کا کام بھی شروع ہو گیا۔ وہاں صرف ایک دیوار کھڑی تھی لیکن ڈانس دیکھنے پر یہ اندازہ نہیں ہوتا کہ وہاں ایسا کچھ ہوا تھا۔ سری دیوی کا سب سے زیادہ مشہور ترین رقص ”میں تیری دُشمن، دُشمن تو میرا، میں ناگن تو سپیرا“ گانے پر مشہور ہوا۔

سری دیوی کی فیملی

سری دیوی نے 1985ءمیں اداکار متھن چکربدی سے شادی کی جو زیادہ عرصہ کامیاب نہ رہی اور 1988ءمیں ان کی علیحدگی ہوگئی۔ اس کے بعد سری دیوی نے اداکار انیل کپور کے بھائی فلم پروڈیوسر بونی کپور سے 1996ءمیں شادی کی اور ان کی دو بیٹیاں خوشی کپور اور جھانوی کپور ہیں۔ سری دیوی کے والد ایک وکیل تھے اور گھر میں بہن سی لتا اور بھائی ستیش تھے۔ ان کے والد نے کسی زمانے میں کانگریس کے ٹکٹ پر شوکاشی سے انتخابات میں حصہ لیا تھا اور سری دیوی نے ان کی انتخابی مہم میں شرکت کی تھی۔ سری دیوی کی والدہ نے ان کے کیریئر میں ایک اہم کردار ادا کیا۔ وہ ایک مکمل اداکارہ تھیں، ان میں کامیڈی، ایکشن، ڈانس اور ڈرامہ سب صلاحیتیں موجود تھیں۔ واضح رہے کہ انیل کپور کے ساتھ سری دیوی کی کئی فلمیں باکس آفس پر سپرہٹ ہوئی تھیں، جس میں ”مسٹرانڈیا“ سرفہرست تھی، دونوں اداکاروں کی قربت کو دیکھتے ہوئے یہ توقع کی جارہی تھی کہ وہ دونوں شادی کرلیں گے لیکن سری دیوی نے شادی انیل کے بھائی بونی کپور سے کی تھی جو پہلے سے ہی شادی شدہ تھے۔فلم ”جدائی“ کے بعد سری دیوی نے فلموں سے بریک لی۔

ایوارڈز واعزازات

سری دیوی کو 2013ءمیں حکومت ہند کی جانب سے بھارت کے سب سے بڑے ”پدماشری اعزاز“ سے بھی نوازا گیا تھا۔ اس کے علاوہ وہ5 بار فلم فیئر ایوارڈ بھی حاصل کر چکی ہیں۔

فلمی دُنیا میں واپسی

سری دیوی نے جب 90ءکی دہائی میں اپنے فلمی کیریئر کو الودع کہا تھا تو اس وقت ان کی فلمیں اچھی طرح سے نہیں چل رہی تھیں، 1997ءمیں فلم ”جدائی“ کے بعد انہوں نے ایک طویل وقفے کے بعد جب دوبارہ فلم انڈسٹری میں قدم رکھا تو اپنی اداکاری سے ایک بار پھر سے ہنگامہ مچا دیا تھا۔ 2012 ءمیں جب وہ ”انگلش ونگلش“ کے ساتھ ہندی فلموں میں واپس آ ئیں تو ایسا لگا کہ وہ فلموں سے گئی ہی نہیں تھیں۔ گزشتہ سال 2017ءمیں ریلیز ہونے والی فلم ”مام“ ان کی آخری فلم ثابت ہوئی۔ پہلے ”انگلش ونگلش“ اور پھر ”مام“ نے باکس آفس پر نہ صرف بڑا بزنس کیا بلکہ ان فلموں کی سری دیوی کی ہمیشہ کی طرح جاندار اداکاری ایک بار پھر فلم بینوں کو دیکھنے کو ملی۔

پرستاروں کی تعزیت اور خراج تحسین

سری دیوی کی موت سے پوری دُنیا میں فلم بینوں اور ان کے پرستار صدمے میں ہیں۔ بالی وڈ فلم انڈسٹری کے تقریباً سبھی فنکار ممبئی میں ان کی رہائش گاہ پر اظہارِ تعزیت کے لےے جمع ہوئے۔ پاکستانی فنکاروں عدنان صدیقی، گلوکار راحت فتح علی خان، اداکارہ سجل علی، صباقمر سمیت دیگر نے بھی اپنے ٹویٹر اکاﺅنٹس سے اظہار تعزیت کیا۔

سری دیوی کی آخری خواہش

سری دیوی کی آخری وصیت اور خواہش تھی کہ ان کی آخری رسومات سفید کپڑے پہنا کر ادا کی جائیں۔ ان کی میت کو اداکار انیل کپور کے گھر لانے کا انتظام کیا گیا، جہاں عام لوگوں اور پرستاروں کا داخلہ بند تھا، سکیورٹی کا سخت انتظام کیا گیا تھا، آخری رسومات میں نامی گرامی فنکاروں سمیت بالی وڈ انڈسٹری کے تمام شعبوں سے تعلق رکھنے والی شخصیات کی شرکت کی ۔

گزشتہ ہفتے بالی ووڈ فلموں کا بزنس کیسا رہا؟

سونو کی ٹیٹو کی ٹویٹی 36.67 کروڑ

عیارے 17.01 کروڑ

پیڈ مین 78.95 کروڑ

پدما وتی 286.24 کروڑ

1921 15.67 کروڑ

کالا کاندی 5.77 کروڑ

مکا باز 8.87 کروڑ

ٹائیگر زندہ ہے 339.16 کروڑ

فکرے ریٹرنز 80.13 کروڑ

فرنگی 9.50 کروڑ

اکثر 2 5.60 کروڑ

تمہاری سلو 34.14 کروڑ

قریب قریب سنگل 12.15 کروڑ


ای پیپر