Bilawal Bhutto Big Announcement about MQM
05 جنوری 2021 (18:31) 2021-01-05

کراچی :چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو نے کراچی میں حیدری روڈ کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کسی صوبے کو اس کا حق نہیں دیا جا رہا ،جب صوبے کی ترقی کیلئے ترقیاتی فنڈز کا مطالبہ کیا جائے تو کہتے ہیں پیسے نہیں ہیں ،انہوں نے ایم کیو ایم پر الزام لگاتے ہوئے کہا کہ وہ بھی منتخب حکومت نہیں بلکہ عمران خان کی طرح سلیکٹڈ ہیں ۔

تفصیلات کے مطابق بلال بھٹو زرداری نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا متحدہ خود بھی کراچی سے منتخب نہیں بلکہ ‘’سلیکٹ’’ ہوتی رہی،چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو نے ایم کیو ایم کو بھی سلیکٹڈ قرار دیدیا،انہوں نے کہا سمجھ سے باہر ہے ایم کیو ایم کس مجبوری پر حکومت کیساتھ کھڑی ہے ،ورلڈ بینک کا موقف وفاق کو بتائیں تو کہتے ہیں پیسے نہیں ،جزائر وفاقی حکومت کے نہیں سندھ کے ماہی گیروں کے ہیں،وفاقی حکومت کو ایک اینٹ یہاں رکھنے نہیں دینگے ۔

بلاول بھٹو نے مزید کہا کسی صوبے کو اس کا اپنا حق نہیں دیاجارہا،ایم کیو ایم پر تنقید کرتے ہوئے بلاول بھٹو کا کہنا تھا منتخب لوگ ہر بار حکومت کا حصہ رہے مگر کراچی کو حصہ نہ دلا سکے،کراچی میں پورے پاکستان کے عوام آکر رہتے ہیں،کراچی کیلئے جب بھی مطالبہ کیا گیا تو ہمارا مذاق اڑایا گیا،ورلڈ بینک کا مؤقف وفاق کو بتائیں تو کہتے ہیں پیسے نہیں،وفاقی حکومت ہمیں ہمارا حق نہیں دے رہی،کراچی میں پیدا ہوئے یہیں جیتے ہیں اور اس کو اون کرتے ہیں،اپنے وسائل سے کراچی کیلئے انوسٹمنٹ لانے کی کوشش کر رہے ہیں،حکومت کو معلوم ہونا چاہیے کراچی پورے ملک کی معیشت کو چالاتا ہے۔

بلاول بھٹو نے کہا موجدہ دور میں لوگوں سے حقوق چھینے جا رہے ہیں،کراچی چلےگاتوپوراملک چلےگا،13 سال حکومت کرنے کےبعد بلاول بھٹو کا کہنا تھا ہمیں اہستہ آہستہ اپنے اس شہر کو تعمیر کرنا ہے، ریونیو اکٹھا کرنے میں سندھ دیگر صوبوں سے آگے ہے،وسائل نہ ہونےکےباوجودعوام کی خدمت میں لگےہوئےہیں،کوشش کررہےہیں جوہوسکےکریں تاکہ  کراچی کی مشکلات کم ہوں،کراچی میں سرمایہ کاری ہوگی تواس کااثرپورےپاکستان پرہوگا، جب 10 بلین ڈالر کی بات کرتے ہیں تو مذاق اڑایا جاتا تھا،وفاقی حکومت کا جو طریقہ ہے اس سے کراچی کا حق مارا جار ہا ہے انہوں نے کہا جو حکومت میں ہیں اور انجوائے کر رہے ہیں وہ کراچی کے عوام پر دھیان دیں،وفاقی حکومت کی ذمہ داری ہے وہ عوام کو درپیش مشکلات کو کم کرے،وفاقی حکومت جو اقدام اٹھاتی ہے وہ عوام کے مسائل کم نہیں بلکہ زیادہ کرتی ہے۔

انہوں نے کہا پیپلزپارٹی تنقید کا نشانہ بنتی رہی ،ایم کیو ایم نے کراچی کیلئے کیا کیا ہے ،ایم کیو ایم کے ووٹوں کی وجہ سے حکومت قائم ہے،سمجھ سے باہر ہے ایم کیو ایم کس مجبوری پر حکومت کےساتھ کھڑی ہے،میری پیدائش سے پہلے ایم کیو ایم کے نمائندے کورنگی سے منتخب ہوتے رہے،ایم کیو ایم نے ڈسٹرکٹ کورنگی کیلئے کچھ نہیں کیا،ضلع کورنگی میں ایم کیو ایم نے ایک اینٹ بھی نہیں لگائی،کراچی والوں کیلئے صاف پانی اور انفراسٹرکچر کا  وعدہ پورا نہیں کیا گیا،سندھ میں گیس کے مسائل سب کے سامنے ہیں،ایم کیو ایم کاحکومت کےساتھ مزیدایک دن رہناعوام کا مطالبہ نہیں،انہوں نے کہا ان کی حکومت کا جو طریقہ ہے اس سے کراچی کا حق مارا جارہا ہے،باقی سیاسی جماعتوں سے اپیل کرتا ہوں وہ کراچی کیلئے سوچیں،اپنی مجبوریوں کی بجائے عوام کے مسائل بارے سوچیں،کوشش کررہےہیں جوہوسکےکریں تاکہ  کراچی کی مشکلات کم ہوں۔


ای پیپر