عالمی برادری مقبوضہ کشمیر میں مظالم کا نوٹس لے : وزیر اعظم
05 جنوری 2020 (19:05) 2020-01-05

اسلام آباد: وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ عالمی برادری مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا نوٹس لے،بھارت کی ہٹ دھرمی کی وجہ سے سلامتی کونسل کشمیری عوام سے اپنا وعدہ پورا کرنے میں ناکام ہے۔

اتوار کو مقبوضہ کشمیر کے یوم حق خود ارادیت پر اپنے بیان میں وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ پانچ جنوری جموں وکشمیر کے عوام کے بنیادی انسانی حقوق کے عزم کا دن ہے۔ 1949میں آج ہی کے روز اقوام متحدہ نے مقبوضہ کشمیر کے حق خود ارادیت کا وعدہ کیا تھا۔ مقبوضہ کشمیر کے عوام کے لئے اقوام متحدہ نے آزاد اور غیر جانبدارانہ حق خود ارادیت کے لئے عزم کا اظہار کیا تھا۔ آج کا دن عالمی برادری اور اقوام متحدہ کو اپنے وعدوں کی یاد دہانی کراتا ہے۔

وزیر اعظم نے کہا کہ بھارت کی ہٹ دھرمی کی وجہ سے سلامتی کونسل کشمیری عوام سے اپنا وعدہ پورا کرنے میں ناکام ہے۔ مقبوضہ کشمیر میں 72سال سے بھارت کا غیر قانونی قبضہ جاری ہے۔ 9 لاکھ بھارتی فوج نے مقبوضہ کشمیر کو دنیا کی سب سے بڑی جیل میں بدل دیا ہے۔ پانچ اگست 2019کے بعد سے مقبوضہ کشمیر میں خوف کے سائے منڈلا رہے ہیں۔

وزیر اعظم نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر کے عوام زندگی کی بنیادی سہولیات سے محروم ہیں۔ بھارتی ریاستی دہشت گردی اور مسلمانوں سمیت اقلیتی حقوق کی خلاف ورزی ہندوتوا نظریہ کا نتیجہ ہے۔ عالمی برادری مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا نوٹس لے۔ پاکستان حق خود رادیت کے حصول تک مقبوضہ کشمیر کے عوام کی اخلاقی‘ سیاسی‘ سفارتی حمایت جاری رکھے گا۔


ای پیپر