فائل فوٹو

امریکا اور ایران جنگ، برطانیہ نے 2 جنگی بیڑے خلیج فارس روانہ کر دیئے
05 جنوری 2020 (13:30) 2020-01-05

امریکی حملے میں ایرانی جنرل کی موت کے بعد مشرق وسطیٰ کی کشیدہ صورت حال کے پیش نظر برطانیہ نے اپنے 2 بحری جنگی بیڑے خلیج فارس میں روانہ کر دیئے ، سعودی عرب بھی خطے میں بڑھتے تناؤ کو کم کرنے کے لئے متحرک ہو گیا۔

تفصیلات کے مطابق برطانیہ نے اپنے 2 جنگی بحری بیڑے خلیج فارس میں روانہ کر دیئے ہیں، ایچ ایم ایس مونٹروز اور ڈیفنڈرز خلیج فارس میں موجود برطانوی جہازوں کی حفاظت کریں گے، یہ بحری بیڑے آبنائے ہرمز سے آئل ٹینکس اور برطانوی شہریوں کو بھی نکالیں گے۔

ایران، امریکا کشیدگی کے باعث نو منتخب برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن نے اپنی چھٹیاں بھی منسوخ کر دی ہیں اور وہ آج وطن واپس پہنچیں گے، وہ کیئریبین کے مسٹیک آئی لینڈ میں چھٹیاں گزار رہے تھے۔ اس کے علاوہ برطانیہ نے اپنے شہریوں کو ایران اور عراق کا سفر کرنے میں احتیاط برتنے کی ہدایت کی ہے۔

دوسری جانب نیٹو ترجمان نے کہا ہے کہ امریکی حملے میں جنرل سلیمانی کے مارے جانے کے بعد نیٹو نے عراق میں اپنا تربیتی مشن معطل کر دیا ہے۔ترجمان ڈائیلان وائیٹ کا کہنا ہے کہ ’نیٹو مشن جاری ہے لیکن اس کے تحت تربیتی سرگرمیاں فی الحال معطل کر دی گئی ہیں،انہوں نے یہ تصدیق بھی کی ہے کہ نیٹو کے سیکرٹری جنرل جینزسٹولن برگ نے تازہ صورت حال کے بعد امریکی وزیر دفاع مارک ایسپر سے ٹیلی فون پر بات کی ہے۔


ای پیپر