Big corruption scandal
05 دسمبر 2020 (18:09) 2020-12-05

اسلام آباد :ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈی والا کیخلاف تفصیلات سامنے آنے لگیں ،نیب نے کچا چھٹا کھول کر رکھ دیا ،نیب کے مطابق سلیم مانڈی والا ،اعجاز ہارون نے عبدالغنی مجید کیساتھ ڈیل کرتے رہے ،سلیم مانڈوی والا،اعجازہارون نےجعلی اکاؤنٹ سے 14 کروڑوصول کیے۔

نیب نے ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کیخلاف جعلی اکاؤنٹس کیس کی تفصیلات جاری کر دیں ،نیب نےسلیم مانڈوی والاکےالزامات کوتحقیقات میں رکاوٹ قراردےدیا،نیب ذرائع کے مطابق تحقیقات میں رکاوٹ ڈالنےوالاکرپشن کاجرم کرتاہے،سابق ایم ڈی پی آئی اےنے بھی  12 پلاٹوں کی الاٹمنٹ کی،ملزمان سلیم مانڈوی والا،اعجازہارون نےعبدالغنی مجیدکیساتھ ڈیل کرتے رہے ،سلیم مانڈوی والا،اعجازہارون نےجعلی اکاؤنٹ سے 14 کروڑوصول کیے، اعجازہارون 8 کروڑ اورسلیم مانڈوی والانے 6 کروڑوصول کیے۔

نیب ذرائع کے مطابق  سلیم مانڈوی والانےجرم چھپانےکیلئےمانڈوی والابلڈرزکااکاؤنٹ استعمال کیا، تحقیقات کیں تورقم کوقرض ثابت کرنےکی کوشش کی گئی،صورتحال یہ تھی کہ  سلیم مانڈوی والانےملازم عبدالقادرشوانی کےنام پلاٹس خریدے،سلیم مانڈوی والانےپلاٹس بیچ کردوسرےملازم کےنام شیئرزخریدلیے، لاکھوں شیئرزکامالک سلیم مانڈوی والاکاملازم دراصل بےنامی دارہے۔


ای پیپر