United States, China, second country, fly, flag, Moon
05 دسمبر 2020 (14:21) 2020-12-05

بیجنگ : خلائی سائنس میں چین کا بڑا کارنامہ، امریکا کے بعد چین چاند پر جھنڈا گاڑنے والا دوسرا ملک بن گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق چین کی نیشنل سپیس ایڈمنسٹریشن کی طرف سے جاری کی جانے والی تصاویر میں دکھایا گیا ہے کہ پانچ ستاروں والا سرخ چینی پرچم چاند کی سطح پر موجود ہے۔

یہ تصاویر روبوٹک خلائی گاڑی چینگ فائیو پر لگے کمیرے سے لی گئی ہیں۔ یہ گاڑی جمعرات کو چاند کے پتھروں کے نمونے حاصل کرکے واپس زمین کی طرف روانہ ہو چکی ہے۔

واضح رہے کہ امریکا نے چاند پر اپنا پہلا جھنڈا سنہ 1969 میں اپولو 11 مشن کے دوران لگایا تھا۔

امریکا کے بعد چین ایسا ملک ہے جو اس وقت سائنس اور ٹیکنالوجی پر سب سے زیادہ پیسے خرچ کر رہا ہے۔ چین جانتا ہے کہ اس میدان میں ترقی کرکے ہی وہ دنیا پر حکمرانی کرنے کے قابل ہو گا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق کچھ چیزوں میں چین امریکا سے آگے نکل گیا ہے لیکن کچھ میں امریکا کو اب بھی برتری حاصل ہے۔

ادھر چین نے دنیا کے سب سے طاقتور کوانٹم کمپیوٹرم کا پروٹو ٹائپ بنا لیا ہے جسے جیو ژانگ کا نام دیا گیا ہے۔

چینی ماہرین کا اس بارے میں کہنا تھا کہ یہ اس وقت دنیا کا طاقتور ترین سپر کمپیوٹر اور یہ باقی سپر کمپیوٹر کے مقابلے میں سو ٹریلین یعنی ایک لاکھ ارب گنا طاقتور ہے جبکہ موجودہ طاقتور ترین کوانٹم کمپیوٹر گوگل سئیکار مور سے بھی دس گنا زیادہ تیز رفتار ہے۔

خیال رہے کہ یہ کمپیوٹر یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی آف چائنہ کے ماہرین نے چین کے دیگر تحقیقی اداروں کے ساتھ تعاون کے بعد انجام دیا ہے۔ اس ٹیم کی قیادت پروفیسر پان جیان وے کر رہے تھے ، جو کوانٹم کمپیوٹنگ اور کوانٹم کرپٹو گرافی جیسے جدید میدانوں میں عالمی شہرت رکھتے ہیں۔


ای پیپر