Second wave, pandemic, Pakistan, NCOC, PTI government
05 دسمبر 2020 (09:46) 2020-12-05

لاہور: ملک میں عالمی وبا سے مزید 44 افراد جان کی بازی ہار گئے ، اموات کی تعداد 8 ہزار ، 303 تک جا پہنچی۔

تفصیلات کے مطابق 24 گھنٹوں کے دوران 3 ہزار 119 افراد میں مرض کی تشخیص ہوئی جس کے بعد متاثرین کی تعداد 4 لاکھ 13 ہزار 191 ہوگئی۔

ادھر کراچی میں عالمی وبا بے قابو ہونے لگی، کیسز بڑھنے پر پانچ سب ڈویژنز میں مائیکرو اسمارٹ لاک ڈاؤن آج سے 18 دسمبر تک نافذ ہوگا۔

دوسری جانب ڈی آئی جی آصف اعجاز شیخ میں عالمی وبا کی تشخیص ہونے کے بعد اُن کو وینٹی لیٹر پر منتقل کر دیا گیا ہے۔

پاکستان اسلامک میڈیکل ایسوسی ایشن کے مطابق عالمی وبا کی دوسری لہر سے پشاور سب سے زیادہ متاثر ہو رہا ہے۔

حکومت کا دعویٰ ہے کہ وہ عالمی وبا پر قابو پانے کے لیے ہر ممکن کوشش کر رہی ہے ، اس حوالے سے وزیراعظم عمران خان سمیت وفاقی وزرا بار بار عوام سے تعاون کی اپیل بھی کر رہے ہیں۔ اُن کا کہنا ہے کہ پہلے بھی اس وبا پر قابو عوام کے تعاون سے پایا گیا تھا اور اب بھی عوام کے ساتھ مل کر اس وبا کو شکست دیں گے۔

حکومت نے عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ ایس او پیز پر عمل کریں اور غیر ضروری گھروں سے نہ نکلیں۔ لیکن بازاروں میں ایس او پیز پر کوئی عمل نہیں کیا جا رہا جس کی وجہ سے عالمی وبا کے کیسز میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے۔

دوسری جانب پی ڈی ایم اتحاد نے حکومت کو گرانے کے چکر میں سیاسی جلسے ترک کرنے سے صاف انکار کر دیا ہے۔ جس کی وجہ سے صورتحال مزید کشیدہ ہونے کا خطرہ ہے۔ حکومت نے سیاسی رہنماوں سے درخواست کی ہے کہ ملکی مفاد میں اپنے جلسے ملتوی کر دے۔


ای پیپر