مودی بہت بڑی غلطی کر بیٹھا ہے: عمران خان
05 اگست 2020 (17:44) 2020-08-05

مظفر آباد:وزیراعظم عمران خان نے  کہا ہے کہ   5اگست کو نریندر مودی بہت بڑی غلطی کر بیٹھا ہے،کشمیری جس دور سے گزر رہے ہیں اس کی منزل آزادی ہے، بھارت سمجھ رہا تھا کہ کشمیر کے حوالے سے اس کے اقدام پر پاکستان خاموشی سے بیٹھا رہے گا۔

آزاد کشمیر اسمبلی سے خطاب  کرتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ  میں نے خود مغربی ممالک کے سربراہان، امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ، جرمنی کی چانسلر انجیلا مرکل، فرانس کے صدر ایمانوئل میکرون سے بات کی اور انہیں سمجھایا کہ کشمیر میں ہو کیا رہا ہے جس سے انہیں آہستہ آہستہ اس معاملے کی سمجھ آنے لگی۔بین الاقوامی برادری کو آہستہ آہستہ مسئلہ کشمیر کی سمجھ آئی، نیویارک ٹائمز میرا مضمون نہیں چھاپتا تھا لیکن انہیں سمجھایا کہ نریندر مودی کا نظریہ آر ایس ایس بنانے والے ہٹلر اور نازیوں کے نظریات سے متفق تھا اور وہ ان کے اقدامات کو درست مانتے تھے اور کہتے تھے یہی ہمیں مسلمانوں کے ساتھ کرنا چاہیئے، میں نے اس کے گورننگ بورڈ کو سمجھایا جس سے تبدیلی آئی۔

 وزیر اعظم نے کہا کہ پاکستان میں جتنی صلاحیت موجود ہے اس کا خود پاکستانیوں کو اندازہ نہیں ہے۔60 کی دہائی میں پاکستان اوپر جارہا تھا اور ایک کتاب میں یہ بھی پیش گوئی کی گئی تھی کہ پاکستان کیلفورنیا بن جائے گا لیکن بدقسمتی سے ایسا نہ ہوا۔ہم مدینہ کی ریاست کی بات کرتے ہیں تو اس ریاست میں نبی کریم ؐ نے قانون بنائے تھے جن پر عمل کرکے وہ ریاست آگے گئی۔ مسلمانوں نے اصول اپنائے تھے اس لیے انہیں کامیابیاں ملیں لیکن جب اصولوں سے پیچھے ہٹ گئے تو پھر زوال کا سامنا کرنا پڑا۔کہ اللہ پاک کشمیریوں کو ایسے حالات سے گزار رہا ہے جس کا نتیجہ آزادی ہے، 5 اگست کو نریندر مودی بہت بڑی غلطی کر بیٹھا ہے۔وزیر اعظم نے کہا کہ  بھارت کو یاد رکھا چائیے کہ  دنیا کی طاقتور قومیں تکبر میں فیصلے کر کے تباہ ہوگئیں۔ سید علی گیلانی کونشان پاکستان اعزاز سے نوازیں گے۔


ای پیپر