فوٹوبشکریہ فیس بک

عام انتخابات میں مبینہ دھاندلی، ن لیگ کا ثبوتوں کے ساتھ عدالت سے رجوع کرنیکا فیصلہ
05 اگست 2018 (15:16) 2018-08-05

لاہور: عام انتخابات 2018ء میں ن لیگ نے مبینہ دھاندلی کے حوالے سے عدالت سے رجوع کر نے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق ن لیگ نے 38 حلقوں میں دھاندلی کے ثبوت اکٹھے کرنے کا دعویٰ کیا ہے اور عدالت سے رجوع کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے جبکہ اس کیلئے کل لاہور ہائیکورٹ میں درخواست دائر کیے جانے کا امکان ہے۔ زاہد حامد کی سربراہی میں قانونی ٹیم بھی تشکیل دیدی گئی ہے جبکہ وائٹ پیپر بھی جاری کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ عمران خان عام انتخابات میں کامیابی کے بعد خطاب میں اپنے لائحہ عمل کا اعلان کر چکے ہیں اور ساتھ ہی انہوں نے اپوزیشن کے تمام تحفظات کو دور کرنے کیلئے حلقے کھولنے کی بھی پیشکش کی تھی۔

عام انتخابات 2018 میں سیاسی جماعتوں کی جانب سے دھاندلی کا شور مچایا جا رہا ہے اسی سلسلہ میں مسلم لیگ ( ن ) نے 38 حلقوں میں دھاندلی کے ثبوت اکٹھے کرنے کا دعویٰ کرتے ہوئے عدالت سے رجوع کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔


ای پیپر