فوٹوبشکریہ فیس بک

وزیر اعلیٰ پنجاب نے ڈولفن اہلکار کی فائرنگ سے ہلاک ہونے والے نوجوان کا نوٹس لے لیا
04 نومبر 2018 (10:13) 2018-11-04

لاہور کے علاقے سبزہ زار میں ڈولفن اہلکار کی فائرنگ سے ذہنی معذور نوجوان جان کی بازی ہار گیا۔ نوجوان کی ہلاکت کا نوٹس لیتے ہوئے وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے آئی جی پنجاب سے رپورٹ طلب کر لی۔

عینی شاہدین کے متضاد بیان سامنے آگئے، زخمی ہونے والے شہری نے بتایا کہ عمیر نے ڈولفن اہلکار کو زخمی کیا جبکہ دوسرے عینی شاہد کے مطابق عمیر کے پاس چھری نہیں تھی۔ لواحقین نے بابو صابو چوک میں لاش رکھ کر احتجاج کیا

پولیس نے موقف اپنایا کہ ذہنی معذور نوجوان نے شہریوں پر چھری سے حملہ کیا، ڈولفن اہلکار مدد کو پہنچے تو نوجوان مزید بپھر گیا اور ڈولفن اہلکار کو بھی چھری سے زخمی کر ڈالا۔

آئی جی پنجاب امجد جاوید سلیمی نے بھی سی سی پی او لاہور سے تفصیلی رپورٹ طلب کر لی۔

ادھر لاہور میں ڈی ایس پی رنگ محل کے ڈرائیور نے بزرگ ٹریفک وارڈن کو تشدد کا نشانہ بنا ڈالا۔ ٹریفک وارڈن کے مطابق ون وے آنے سے روکنے پر ڈرائیور نے تھپڑوں کی بارش کر دی۔

 

 

 

 

 

 


ای پیپر