Why imran khan ask for vote of Confidence
04 مارچ 2021 (16:21) 2021-03-04

اسلام آباد :وزیر اعظم عمران خان نے سینٹ الیکشن میں شکست کے بعد سیاسی حلقوں میں اُس وقت ہلچل مچا دی جب انہوں نے اعتماد کا ووٹ لینے کا اعلان کر دیا ،وزیر اعظم نے سینٹ الیکشن کے اگلے ہی روز ممبر پارلیمان کا اجلاس طلب کیا اور اس میں کہا کہ اعتماد کا ووٹ لینے کا فیصلہ اس لیے کیا تاکہ سب بے نقاب ہوں ،جس کو مجھ پر اعتماد نہیں کھلم کھلا بتائے ۔

وزیر اعظم عمران خان نے ممبر پارلیمان سے ملاقات کے دوران واضح اعلان کرتے ہوئےکہا کہ صادق سنجرانی چیئرمین سینٹ کے لیے ہمارے امیدوار ہونگے ،انہوں نے کہا کہ میں نے کوشش کی تھی کہ اس دفع سینٹ الیکشن میں پیسانہ چلے ،لیکن مجھے معلوم تھا کہ اس دفعہ بھی سینٹ الیکشن میں اگر اوپن ووٹنگ نہ کروائی گئی تو پیسا چلے گا اور پھر سب نے دیکھا کہ سینٹ الیکشن میں کیسے پیسا چلایا گیا ۔

وزیر اعظم عمران خان کا کہنا تھا اعتماد کا ووٹ لینے کا فیصلہ اس لیے کیا تاکہ سب بے نقاب ہوں ،جس کو مجھ پر اعتماد نہیں کھلم کھلا بتائے ،اقتدار کی ہوس نہیں ،اقدا ر کی سیاست کی ،وزیر اعظم نے صاد ق سنجرانی کو چیئرمین سینٹ کا امیدوار نامز د کرنے کے بعد چوہدری پرویز الہٰی سے بھی موجودہ سیاسی صورتحال تبادلہ خیال کیا ۔


ای پیپر