Federal ministers have no knowledge of law and constitution: Shahid Khaqan Abbasi
کیپشن:   فائل فوٹو
04 مارچ 2021 (13:28) 2021-03-04

اسلام آباد: سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے وزرا کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ انہیں قانون کا پتا ہے نہ آئین کا اور کہتے ہیں کہ وزیراعظم اعتماد کا ووٹ لیں گے۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ سینیٹ میں حکومت کا امیدوار وزیر خزانہ تھا۔ اس امیدوار کی انتخابی مہم خود وزیراعظم نے چلائی۔ سینیٹ انتخابات میں حکومت نے دھونس، دھاندلی کے ذریعے کامیابی کی کوشش کی۔

شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ کل کی شکست سے حکومت بوکھلاہٹ کا شکار ہے۔ آج قومی اسمبلی کا اجلاس اچانک ملتوی کر دیا گیا۔ آج سپیکر قومی اسمبلی اچانک اسمبلی سے بھاگ گئے۔

ان کا کہنا تھا کہ حکومت کی ڈھائی سال کی کارکردگی عوام کے سامنے ہے۔2018 ء کا الیکشن عوام کو مشکلات اور مہنگائی دے کر گیا ہے۔ اس بات میں حقیقت ہے کہ وزیراعظم عمران خان اپنا اعتماد کھو چکے ہیں، انہیں اب اخلاقی طور پر خود ہی مستعفی ہو جانا چاہیے۔

اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے راجہ پرویز اشرف کا کہنا تھا کہ حکومت کو سینیٹ میں کل جو شکست ہوئی، اس کی مثال نہیں ملتی۔ حکومت اپنی خفت مٹانے کیلئے مختلف طریقے گھڑ رہی ہے۔ قومی اسمبلی نے عمران خان پر عدم اعتماد کا اظہار کر دیا ہے۔

راجہ پرویز اشرف نے وزیراعظم پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ وہ کہتے تھے کہ اگر چند لوگ میرے خلاف کھڑے ہو جائیں تو استعفیٰ دیدوں گا، آج ان کے اپنے 17 اراکین نے گو عمران گو کا نعرہ لگا کر انہیں مسترد کردیا۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان کا بیان آیا کہ وہ چوہوں کی طرح حکومت نہیں کریں گے۔ عمران خان اگر ایسے حکومت نہیں کرنا چاہتے تو شیروں کی طرح استعفیٰ دیں۔

ان کا کہنا تھا کہ حکومت نے ڈھائی سال میں عوام کو مہنگائی اور پریشانی کے سوا کچھ نہیں دیا۔ موجودہ حکومت مکمل ناکام ہو چکی ہے اور عوام کا اعتماد کھو چکی ہے۔ پی ڈی ایم کا مطالبہ ہے عمران خان مستعفی ہوں اور نئے انتخابات کرائے جائیں۔ عمران خان کی ڈھائی سالہ کارکردگی سے عوام مسائل میں گھر چکے ہیں۔


ای پیپر