Riaz ch, Urdu, Nai Baat Newspaper, e-paper, Pakistan
04 جون 2021 (11:23) 2021-06-04

ایگزیکٹوڈائریکٹر لاہور آرٹس کونسل الحمراء فرحت جبیں نے چارج سنبھالنے کے بعد ادارے کے مختلف شعبوں کے سربراہان سے ملاقات میں الحمرا ء کے زیر انتظام ادبی و ثقافتی سرگرمیاں کے جلد دوبارہ آغاز کے لئے عملہ کو تیار رہنے کی ہدایات کیں۔ آج کل عوام جس ذہنی دباؤ کا شکار ہیں ، اس ماحول میں ہلکی پھلکی سرگرمیاں ہی ذہنی آسودگی کا باعث بنیں گی۔الحمراء کے پروگرام عوام کو کورونا کے نفسیاتی اثرات کو کم کرنے میں معاون ثابت ہونگے۔

ابھی حال ہی میں ایڈیشنل سیکرٹری انفارمیشن فرحت جبیں کو الحمراء آرٹس کونسل کے ایگزیکٹوڈائریکٹر کی اضافی ذمہ داری دی گئی اور انہوں نے اپنے عہدے کا چارج سنبھال کر کام شروع کر دیا۔محترمہ فرحت جبیں ملنسار،مستعد، ذہین، فعال اور اپنے کام سے انتہائی لگاؤ رکھنے والی خاتون ہیں۔عوام الناس کی خدمت کے جذبے سے سرشار اپنے ادارے میں انتہائی سرگرم افسر ہیں۔ انہیں جس بھی عہدے پر تعینات کیا گیا انہوں نے اپنی خدمات کو نہایت جانفشانی سے ادا کیا۔پنجاب میں ثقافت کے فروغ کیلئے وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان احمد خان بزدار اور وزیر ثقافت میاں خیال احمد کاسترو کی ہدایات کے مطابق عمل پیرا ہیں۔

محترمہ فرحت جبیں اعلیٰ تعلیم یافتہ ہیں۔اپنی تعلیم پنجاب یونیورسٹی سے مکمل کی اور 31 ویں سول سروس کمشن سے امتحان پاس کر کے گورنمنٹ سروس میں آئیں۔انہوں نے پریس انفارمیشن ڈیپارٹمنٹ، وزیر اعظم سیکریٹریٹ، واپڈا ہاؤس، شعبہ تعلیم اور سیاحت اور اطلاعات و ثقافت کے شعبوں میں اپنی قابلیت کے جوہر دکھائے ۔

 محترمہ فرحت جبیں نے الحمراء اکیڈمی آف پرفارمنگ آرٹس کے اساتذہ و نوجوان آرٹسٹوں کو 

کورونا ویکسی نیشن کرانے کی ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا کہ حکومت پنجاب کی ڈائریکشن کے مطابق ادارہ کی سرگرمیوں کو بحال کیا جائے۔ کیونکہ یہ ضروری ہے کہ الحمراء کی سرگرمیوں کی بحالی پر حکومتی جاری کردہ کورونا کے حفاظتی اقدامات پر سختی سے عمل درآمد کرایا جائے تاکہ ناصرف الحمراء کا عملہ بلکہ آنے والے عوام بھی کورونا حفاظتی ہدایات پر عمل کرتے ہوئے بے خوف یہاں آئیں اور ثقافتی پروگراموں سے لطف اٹھائیں۔ 

محترمہ فرحت جبیں کا کہنا ہے کہ آرٹ اینڈ کلچر کے میدان میں ترقی کے بے شمار مواقع موجود ہیں۔ آرٹسٹوں کی فلاح و بہبود کے لئے ٹھوس اقدامات کررہے ہیں جومستقبل میں بھی جاری رہیں گے۔ آرٹ،موسیقی، ڈرامہ و ادب کے فروغ کے لئے ہمارا ہوم ورک مکمل ہے۔

 الحمرا اپنی تعمیر و تشکیل اور کارکردگی کے لحاظ سے ملک کا سب سے بڑا ثقافتی ادار ہ ہے اور اسے بین الاقوامی شناخت حاصل ہے۔ یوں تو آزادی سے قبل لاہور میں ثقافتی سرگرمیوں کے کئی مراکز قائم تھے، جہاں ڈرامے و تھیٹر ہوتے اور فلمیں دکھائی جاتیں، مگر قیامِ پاکستان کے بعد ثقافتی سرگرمیوں کا جو سب سے بڑا مرکز ٹھہرا وہ الحمراء آرٹس کونسل ہے۔ گورنر جنرل پاکستان خواجہ ناظم الدین نے 10 دسمبر1949ء کو پاکستان آرٹس کونسل کا باقاعدہ افتتاح کیا۔ آرٹس کونسل کو ’’الحمرا‘‘ کا نام دیا گیا اور یہ ہی نام اس کی پہچان رہا ہے۔ 

عام لوگوں کے لیے الحمرا کی شہرت اور شناخت یہاں پیش کیے جانے والے ڈراموں کی وجہ سے ہے۔ ابتدا سے ہی الحمرا میں بڑے معیاری ڈرامے پیش کیے گئے۔ شروع شروع میں سیّد امتیاز علی تاج کے ڈرامے پیش کئے گئے۔ اس کے بعد الحمرا میں ڈرامے پیش کرنے کا سلسلہ چلتا رہا۔ جب فیض احمدفیض الحمرا آرٹس کونسل کے سیکرٹری بنے تو ڈرامے کا معیار پہلے سے زیادہ بہتر ہو گیا اور اس کی سرگرمیوں میں اور اضافہ ہو گیا۔ بہرحال الحمرا آرٹس کونسل کی عمارت مال روڈ کی جدید عمارتوں میں شمار ہوتی ہے اور یہ اپنے خوب صورت طرزِ تعمیر کے باعث مال روڈ کے حْسن کو دوبالا کیے ہوئے ہے۔

 پنجاب کی ثقافت اور روایات کے رنگ دل آویز ہیں اور دنیا بھر میں پنجاب کی ثقافت کو پسند کیا جاتا ہے۔ پنجاب کی ثقافت کی جڑیں تاریخ میں پیوست ہیں۔ دنیا بھر میں پنجابی ہر جگہ اپنی منفرد شناخت رکھتے ہیں۔ ثقافتی تہوار ہر علاقے کی پہچان اور انفرادیت کو ظاہر کرتے ہیں۔ اس ثقافت اور روایات کو یاد رکھنا زندہ دلی کی علامت ہے۔پنجاب کی ثقافت کو متعارف کرانے میں محکمہ اطلاعات وثقافت کا کردار قابل تحسین ہے۔وزیر ثقافت خیال احمد کاسترو محنتی ، فعال اور مستعد سیاستدان ہیں۔ انہوں نے ہمیشہ عوام کی بے لوث خدمت کی ہے۔ ثقافت کی وزار ت سنبھالتے ہی انہوں نے پنجاب کی ثقافت کو ترقی دینے اور پوری دنیا میں متعارف کرانے کیلئے متعدد اقدامات کیے۔ ان کا کہنا ہے کہ ٹیم ورک، لگن اور وزیر اعظم عمران خان کے ویژن کے مطابق پنجابی زبان اور کلچر کو گراس روٹ لیول تک پروموٹ کرنے کے لیے تمام وسائل بروئے کار لائے جائیں گے تاکہ نئی نسل کو پنجابی زبان و ادب سے روشناس کرایا جا سکے۔

 امید ہے محترمہ فرحت جبیں بھی الحمراء میں اسی جذبے کو برقرار رکھ کر ادارے کی نیک نامی میں مزید اضافہ کریں گی کیونکہ وہ خود بھی کہتی ہیں کہ میں ہر ذمہ داری کو چیلنج سمجھ کر نبھاتی ہوں۔ویسے بھی الحمراء ان کے لئے نئی جگہ نہیں ہے۔ وہ عرصہ دراز سے محکمہ اطلاعات وثقافت سے منسلک ہیں اور انتظامی امور کا وسیع تجربہ رکھتی ہیں۔ 


ای پیپر