امریکہ میں افرا تفری پھیلانے کی اصل وجہ ٹرمپ ،اہم انکشاف
04 جون 2020 (19:46) 2020-06-04

واشنگٹن: امریکہ کے سابق سیکرٹری دفاع جِم میٹس نے امریکہ بھر میں جاری بدامنی پر خاموشی توڑتے ہوئے کہا ہے کہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے امریکی عوام کو تقسیم کرنے کی کوشش کی ہے۔

ٹرمپ کی شام کے حوالے سے پالیسی کیخلاف پینٹاگون کی سربراہی سے دسمبر2018میں احتجاجا مستعفی ہونے والے سابق میرین جنرل نے کہاکہ میری زندگی میں ڈونلڈ ٹرمپ پہلے صدر ہیں جو امریکی شہریوں کو متحد کرنے کی کوشش نہیں کرتے، حتی کہ متحد کرنے کا دکھاوا بھی نہیں کرتے، اس کے بجائے وہ ہمیں تقسیم کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔ہم 3سال سے جان بوجھ کرایسا کرنے کے نتائج دیکھ رہے ہیں،ہم 3سال سے عقلمند قیادت نہ ہونے کے نتائج دیکھ رہے ہیں،میٹس نے یہ باتیں اٹلانٹک رسالہ کیلئے ایک مضمون میں لکھیں۔

انہوں نے کہاکہ ہم ٹرمپ کے بغیر متحد ہو سکتے ہیں، اپنے شہری حلقوں میں طاقت پیدا کر سکتے ہیں۔ ایسا کرنا آسان نہیں ہوگاجیسا کہ پچھلے چند دنوں میں ہم نے دیکھا ہے، لیکن یہ اپنے شہریوں، اپنے بچوں اور سابقہ نسلوں کیلئے جنھوں ںے ہمارے وعدے کی حفاظت کیلئے خون بہایا ، کی طرف سے ہم پر قرض ہے۔میٹس کی جانب سے تحفظات ٹرمپ کی اس دھمکی کے بعد سامنے آئے ہیں جس میں انہوں نے کہا تھا کہ وہ پولیس کے ظلم اور نسلی امتیاز کیخلاف جاری مظاہروں پر قابو پانے کیلئے متحرک افواج بھیج سکتے ہیں۔

منیاپولس میں سفید فام پولیس اہلکار کے ہاتھوں غیر مسلح سیاہ فام جا رج فلائڈ کی ہلاکت کیخلاف مظاہرے امریکہ کے 300سے زائد شہروں اور علاقوں میں پھیل چکے ہیں۔میٹس نے کہا کہ ہمیں ریاستوں کے گورنرز کی جانب سے بہت ہی اہم مواقع پر درخواست پر اپنی افواج بھیجنی چاہئے۔ اپنی کوششوں میں فوج کو شامل کرنے سے مسئلہ بڑھے گا جیسا کہ ہم نے واشنگٹن ڈی سی میں مشاہدہ کیا ہے، فوج اور شہریوں کے مابین ایک جھوٹا مسئلہ کھڑا ہو جائے گا۔


ای پیپر