file photo

'اسٹیل ملز کی بحالی کیلئے نجی شراکت داری کو شامل کر رہے ہیں'
04 جون 2020 (16:28) 2020-06-04

اسلام آباد: وفاقی وزیر حماد اظہر کہتے ہیں، پاکستان اسٹیل ملز کی بحالی کیلئے نجی شراکت داری کو شامل کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان اسٹیل ملز کا قرض 230 ارب سے تجاوز کرگیا ہے، بند ملز کے ملازمین کی تنخواہوں پر تقریباً 55 ارب روپے خرچ کر چکے ہیں، حکومت تنخواہوں، سود کی صورت میں ماہانہ 70 کروڑ روپے ادا کر رہی ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ پاکستان اسٹیل ملز کو بند کرنے کے سیاسی بیانات افسوسناک ہیں، ادارے کی بحالی کیلئے مشکل فیصلے کرنے ہیں، ماضی میں اسٹیل ملز کو 90 ارب روپے کا بیل آؤٹ پیکج دیا گیا۔

گزشتہ 5 سال سے پاکستان اسٹیل ملز بند ہے جس کے 9 ہزار کے قریب ملازمین ہیں، پیپلزپارٹی دور میں پاکستان اسٹیل ملز خسارے میں گئی جبکہ مسلم لیگ ن کے دور میں اسیٹل ملز کو بند کر دیا گیا تھا۔


ای پیپر