جعلی اکاؤنٹس کیس میں تین ملزمان رقم واپس کرنے پر تیار
04 جولائی 2019 (15:02) 2019-07-04

اسلام آباد: جعلی اکاؤنٹس کیس کی سماعت کے دوران نیب کے پاس گرفتار تینوں ملزمان نیب کو رقم واپس کرنے پر تیار ہو گئے،عدالت نے تینوں ملزمان کے جسمانی ریمانڈ میں 16 جولائی تک توسیع کرتے ہوئے 16 جولائی کو دوبارہ پیش کرنے کا حکم دے دیا۔

جعلی اکاؤنٹس کیس کی سماعت ہوئی۔کیس کی سماعت اسلام آباد ہائیکورٹ کے جج محمد بشیر نے کی ۔ ملزمان خورشید انور جمالی، سید عارف علی اور سید آصف محمود نے پلی بارگین کی درخواست کر دی ہے ۔نیب کے پاس گرفتار تینوں ملزمان نیب کو رقم واپس کرنے پر تیارہو گئے۔اسلام آباد ہائیکورٹ کے جج محمد بشیر نے تفتیشی آفسر سے استفسار کیا کہ ان کی پلی بارگین درخواست کا کیا بنا ہے۔

تفتیشی افسر نے کہا کہ ملزماں کی درخواست پر پراسس جاری ہے۔جج محمد بشیر نے استفسار کیا کہ کب تک پراسس مکمل ہو جائے گا، جس پر تفتیشی افسر نے کہا کہ کچھ دن اور لگیں گے، ہر چیز دیکھنا ہوتا ہے۔جج محمد بشیر نے کہا کہ اس مرتبہ مکمل کر لیں، جس پر تفتیشی افسر نے کہا کہ جی انشا اللہ مکمل کر لیں گے۔عدالت نے تینوں ملزمان کے جسمانی ریمانڈ میں 16 جولائی تک توسیع کرتے ہوئے 16 جولائی کو دوبارہ پیش کرنے کا حکم دے دیا۔


ای پیپر