کراچی کو نیو یارک اور لندن کی طرح چلائیں گے: عمران خان
04 جولائی 2018 (14:33) 2018-07-04


کراچی :پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ اللہ سب سے بڑا امپائر ہے، جس نے بارش کر کے ان سب کو بے نقاب کر دیا، ان کے پاس پنجاب اور خیبرپختونخوا میں اتنی نشستیں ہوں گی جس وفاقی حکومت بنانے کے لیے کافی ہوں گی، کراچی کو نیویارک اور لندن کی طرح سے چلائیں گے ، یہاں طاقتور مقامی حکومت کا نظام لے کر آئیں گے ، بزنس کمیونٹی اب ڈر ڈر کر قدم نہ اٹھائے۔

کراچی میں بزنس کمیونٹی سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ کارکنان سندھ میں سڑکوں پر نکلیں، ریلیاں نکالیں تاکہ لوگوں کو آپ کی طاقت کا اندازہ ہو۔ کبھی اپنے مخالف کو کمزور نہ سمجھیں، کرکٹ کی زبان میں کہاجاتا ہے کہ جب تک آخری گیند نہ ہوجائے تو فیصلہ نہیں ہوتا۔انہوں نے کہا کہ امپائر صرف ایک ہی ہے اور وہ اللہ ہے، پاکستان کے عوام تبدیلی چاہتے ہیں، 30 سال سے دونوں جماعتیں باریاں لے رہی ہیں، لاہور کو جو پیرس بنانا تھا وہ سب قوم کے سامنے آگیا۔ عمران خان نے کہا کہ کبھی ملک میں ایسی بیروزگاری نہیں تھی اور کبھی قوم پر اتنے قرضے نہیں چڑھے، کبھی ڈالر اتنا اوپر نہیں گیا، برصغیر دنیا کاغریب ترین علاقہ ہم اس میں بھی سب سے پیچھے ہیں،بنگلا دیش آج ہم سے آ گے نکل چکا ہے ، ملک کے ادارے تباہ کردیئے گئے، اداروں سے ہی ملک اوپر جاتا ہے ۔

ان کا مزید کہنا ہے کہ پی آئی اے کبھی دنیا کی نمبر ون ایئر لائن تھی، ہم نے 30سال میں انہیں پاکستان کو تباہ کرتے دیکھا ہے۔ عمران خان نے مزید کہا کہ اللہ نے پاکستان کو ایک زبردست موقع دیا ہے، عمران خان نے کہا کہ میرا ایمان ہے لمبی اندھیری رات ختم ہونے والی ہے، اقتدار میں آنے کے لیے کراچی سے الیکشن لڑنے کی ضرورت نہیں، خیبرپختونخوا اور پنجاب میں ہماری جو پوزیشن ہے اس میں وفاقی حکومت بنانے کیلئے کافی نشستیں ہوں گی لیکن کراچی کے بغیر پاکستان عظیم نہیں بن سکتا، کراچی سے الیکشن لڑنے کا فیصلہ اس وجہ سے کیا کہ کراچی جب تک نہیں اوپر نہیں آئے گا، تبدیلی نہیں آئے گی اور پاکستان بھی نہیں اٹھ سکے گا، ہمارے پاس کراچی کو اٹھانے کا پلان ہے۔چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ کراچی ہاکستان کامعاشی حب ہے، مجھے یہاں سے الیکشن جیتنے کی ضرورت نہیں تھی، پاکستان کی وجہ سے کراچی ہمیشہ میرے دل میں رہے گا۔انہوں نے مزید کہا کہ یہاں کی میمن کمیونٹی خیرات بہت کرتی ہے، انہوں نے شوکت خانم کے لیے کافی مدد کی ، جو لوگ 30سال سے باریاں لے رہے ہیں کراچی میں ان کے پاس مسائل ٹھیک کرنے کاحل نہیں ہے۔

عمران خان نے مزید کہا کہ پختونخوا کی پولیس ماڈل پولیس بن چکی ہے، سندھ اور پنجاب میں پولیس کو ٹھیک نہیں کیا جا سکا، رینجرز کراچی میں اس لیے ہے کہ پولیس ٹھیک نہیں، شہباز شریف نے پولیس کو غلط استعمال کیا، وہ پولیس کے ذریعے لوگ مرواتے رہے، ماڈل ٹائون میں پولیس کے ذریعے قتل کرائے، ایسا دنیا میں کہیں نہیں ہوتا، را ئوانوار نے 440 ماورائے عدالت قتل کیے ۔انہوں نے کہا کہ پختون خوا دہشت گردی سے سب سے زیادہ متاثر تھا، اب صحت اور تعلیم کا نظام خیبر پختونخوا میں سب سے بہتر ہے۔چیئرمین تحریک انصاف نے کہا کہ ابھی سے پلان کر رہے ہیں کہ کراچی کو پانی کیسے دینا ہے، یہاں کچرے سے بجلی پیدا کریں گے ۔ عمران خان نے دعوی کیا کہ کراچی کو نیویارک اور لندن کی طرح سے چلائیں گے ، یہاں طاقتور مقامی حکومت کا نظام لے کر آئیں گے ، بزنس کمیونٹی اب ڈر ڈر کر قدم نہ اٹھائے۔


ای پیپر