احتساب کرو لیکن انصاف بھی ملنا چاہیے : بلاول بھٹو زرداری
04 جولائی 2018 (00:01) 2018-07-04


ٹنڈومحمد جام : پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ جتنا کام قائم علی شاہ اور مراد علی شاہ کے دور میں ہوا اتنا کام سندھ کی تاریخ میں نہیں ہوا، احتساب کرو لیکن انصاف بھی فراہم کرنا چاہیے ، پیپلز پارٹی ہمیشہ قانون کی حکمرانی کی بات کرتی ہے، ہمارے منشور میں غریب خواتین کیلئے بلا سود قرضے بھی شامل کئے گئے ہیں۔
ٹنڈم محمد جام میں جلسے سے خطاب کر رہے تھے۔ چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو نے کہا کہ یہ میرا پہلا الیکشن ہے اور میں اس کیلئے مہم سازی کرنے نکلا ہوں، جیسے آپ نے ذوالفقار علی بھٹو اور بے نظیر کا ساتھ دیا تھا مجھے امید ہے اس بار آپ میرا بھی ساتھ دیں گے، ہمارے سامنے کٹھ پتلیوں کا اتحاد بنایا گیا،کٹھ پتلی حکومت عوام کے مسائل حل نہیں کر سکتے، کوئی کٹھ پتلی حکومت عوام کے مسائل حل نہیں کر سکتے، صرف جمہوری حکومت ہی عوام کے مسائل حل کرتی ہے، آج کٹھ پتلی اتحاد والے پانی پر اعتراض کر رہے ہیں، کون ہیں جو عدالت کے ذریعے سے ڈیم بنانا چاہتے ہیں، پیپلز پارٹی واحد جماعت ہے جو پانی کے مسائل حل کر سکتی ہے، پنجاب میں ایک بھی پانی کا منصوبہ مکمل نہیں کیا، مسلم لیگ (ن) نے عوام کے حقوق کھائے ہیں، ہمیں سمندر کے پانی کو میٹھا کرنا پڑا ہم کریں گے، پیپلز پارٹی واحد جماعت ہے جس کا کوئی منشور اور نظریہ ہے، شہید ذوالفقار علی بھٹو نے اپنا منشور دے کر عوام کی خدمت کی، اسی طرح میں بھی آپ کی خدمت کرنا چاہتا ہوں، ہم نے غریب خواتین کیلئے بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام شروع کرایا تھا، ہمارا منشور بھوک مٹاؤ پروگرام ہو گا، بھوک مٹاؤ پروگرام سے بے روزگاری کا مقابلہ بھی کریں گے، غریبوں کو بے نظیرکسان کارڈ دیئے جائیں گے، اس سے کسان اپنی فصلوں کیلئے انشورنس پالیسی کرا سکیں گے۔


انہوں نے کہا کہ ہم نے اپنے منشور میں غریب خواتین کیلئے بلاسود قرضے بھی شامل کئے ہیں، پیپلز پارٹی کا منشور عوام دوست منشور ہے، آج بھی اس ملک میں سب کیلئے مختلف نظام چل رہے ہیں، پی پی نے قانون کی حکمرانی کی بات کی ہے، احتساب کرو لیکن انصاف بھی فراہم کیا جانا چاہیے ، دوسروں کیلئے الگ اور پیپلز پارٹی کیلئے الگ نظام ہے، آپ نے اتنی مشکلات کے باوجود ہمارا ساتھ دیا، کٹھ پتلی مخالفین کہتے ہیں کہ سندھ حکومت نے کوئی کام نہیں کرایا، میں انہیں بتا دیناچاہتا ہوں جتنا کام قائم علی شاہ اور مراد علی شاہ نے کئے اتنے سندھ کی تاریخ میں نہیں ہوئے، آپ نے مجھے مایوس نہیں کرنا ہے، میرا کوئی نمائندہ آپ کی خدمت نہیں کرے گا، اس کی ذمہ داری میں اٹھاؤں گا،25جولائی کو آپ نے پیپلز پارٹی کے نشان تیر پر مہر لگانی ہے۔


ای پیپر