NAB, pounds, British, Broadsheet, PML-N, PTI government
04 جنوری 2021 (15:36) 2021-01-04

لاہور: لندن میں مقدمہ ہارنے کے بعد نیب نے برطانوی فرم براڈ شیٹ کو بھاری جرمانہ ادا کر دیا۔ نیب نے برطانوی فرم کو 28 اعشاریہ سات ملین پاؤنڈ ادا کر دیے۔

نیب کی ناکامی پر تبصرہ کرتے ہوئے لیگی رہنما احسن اقبال نے کہا کہ نیب لندن میں مقدمہ ہار چکا ہے ، نیب کی وجہ سے پاکستانیوں کے 4 ارب روپے ڈوب گئے۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے احسن اقبال نے کہا کہ اتنی مالیت کے فلیٹ نہیں ، جتنی زیادہ رقم خرچ کر دی گئی، نیب پر اب کون مقدمہ بنائے گا؟ 4 ارب روپے انتقامی کارروائیوں کی نذر کر دیئے گئے۔ پاکستان کے زرمبادلہ کا نقصان کون پورا کرے گا؟

واضح رہے کہ برطانوی ہائیکورٹ نے براڈ شیٹ کی جانب سے حکومت پاکستان اور نیب کے خلاف مقدمے میں شریف فیملی کی ملکیت ایون فیلڈ اپارٹمنٹس کے 4 فلیٹس کی اٹیچمنٹ کے خلاف احکامات جاری کر دیے۔

براڈ شیٹ نے درخواست میں 4 اپارٹمنٹس کی اٹیچمنٹ کی استدعا کی تھی جبکہ شریف فیملی کے وکلا نے عدالتی فیصلے کا خیر مقدم کیا۔

خیال رہے کہ سابق صدر پرویز مشرف نے نواز شریف ، آصف علی زرداری ، بینظیر بھٹو اور دیگر کی پراپرٹیز کا پتہ چلانے کے لیے 1999 میں براڈ شیٹ کی خدمات حاصل کیں تھیں، یہ معاہدہ 2003 میں ختم ہو گیا تھا۔

احسن اقبال نے مزید کہا کہ حکومت انتقامی ایجنڈے پر عمل کر رہی ہے، خواجہ آصف اور شہباز شریف کے تمام اثاثے ڈکلیئرڈ ہیں ، شہباز شریف نے اپنے تمام اثاثے ظاہر کئے۔ حکومت شہباز شریف کیخلاف ایک پیسے کی کرپشن ثابت نہ کرسکی۔

انہوں نے کہا کہ فارن فنڈنگ کیس میں اسرائیل اور بھارت کی فنڈنگ ہے، پاکستان میں مدر آف این آر او فارن فنڈنگ کیس ہے۔ جس دن فارن فنڈنگ کیس کھلا عمران خان اور پی ٹی آئی گھر جائیں گے۔


ای پیپر