NAB, case, London, Pakistanis, Rs 4 billion, Ahsan Iqbal
04 جنوری 2021 (14:52) 2021-01-04

لاہور: رہنما مسلم لیگ (ن) احسن اقبال نے کہا کہ نیب لندن میں مقدمہ ہار چکا ہے ، نیب کی وجہ سے پاکستانیوں کے 4 ارب روپے ڈوب گئے۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے احسن اقبال نے کہا کہ اتنی مالیت کے فلیٹ نہیں ، جتنی زیادہ رقم خرچ کر دی گئی، نیب پر اب کون مقدمہ بنائے گا؟ 4 ارب روپے انتقامی کارروائیوں کی نذر کر دیئے گئے۔ پاکستان کے زرمبادلہ کا نقصان کون پورا کرے گا؟

انہوں نے کہا کہ حکومت انتقامی ایجنڈے پر عمل کر رہی ہے، خواجہ آصف اور شہباز شریف کے تمام اثاثے ڈکلیئرڈ ہیں ، شہباز شریف نے اپنے تمام اثاثے ظاہر کئے۔ حکومت شہباز شریف کیخلاف ایک پیسے کی کرپشن ثابت نہ کرسکی۔

انہوں نے کہا کہ جن اداروں کو کراچی میں قیام امن کیلئے لگایا گیا تھا ، آج وہی ادارے اپوزیشن کا پیچھا کر رہے ہیں۔

احسن اقبال نے کہا کہ دہشت گردوں نے مچھ میں کان کنوں کو قتل کیا ، حکومت امن وامان قائم کرنے میں ناکام ہوچکی ہے۔ وزیر داخلہ کہہ رہے ہیں کہ دہشت گردی ہونے والی ہے ، قوم تیار رہے ، آپ کس مرض کی دوا ہیں؟ حکومت کا کام ہے دہشت گردی روکے۔ یہ حکومت پاکستان میں لطیفہ حکومت بن چکی ہے۔ وزیر داخلہ کو سیکیورٹی کی نہیں بلکہ نواز شریف کا پاسپورٹ کینسل کرنے کی فکر ہے۔

وزیراعظم کی 50 رکنی کابینہ صرف بری خبریں دینے کیلئے ہے ، پہلے ٹرین حادثات میں لوگ مر رہے تھے، اب دہشت گردی کی نذر ہو رہے ہیں۔ شیخ رشید کو ملکی سیکیورٹی پر توجہ دینی چاہیے۔ حکومت جھوٹے الزامات لگا کر اپنی ناکامیوں پر پردہ ڈال رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ فارن فنڈنگ کیس میں اسرائیل اور بھارت کی فنڈنگ ہے، پاکستان میں مدر آف این آر او فارن فنڈنگ کیس ہے۔ جس دن فارن فنڈنگ کیس کھلا عمران خان اور پی ٹی آئی گھر جائیں گے۔

احسن اقبال نے کہا کہ گرینڈ ڈائیلاگ اگر ہوگا تو عمران خان کے جانے کے بعد ہوگا ، پی ڈی ایم کی جدوجہد کسی غیر جمہوری قوت کے سہارے نہیں چل رہی ، جو صورتحال پیدا ہو رہی ہے یہ عمران خان کی حکومت کر رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ اس وقت تمام اسٹیک ہولڈرز کے درمیان بداعتمادی ہے ، حکومت محاذ آرائی کی کیفیت پیدا کر رہی ہے۔


ای پیپر