فوٹو بشکریہ فیس بک

نواز شریف کی تمام بیماریوں کا علاج پاکستان میں ہی ممکن ہے: میڈیکل بورڈ
04 فروری 2019 (13:57) 2019-02-04

لاہور: سابق وزیراعظم نواز شریف کی تمام بیماریوں کا علاج پاکستان میں ہی ممکن ہے، بیرون ملک بھجوانے کی کوئی ضرورت نہیں، میڈیکل بورڈ نے واضح کر دیا۔

میڈیکل بورڈ کے سربراہ پروفیسر محمود ایاز کا کہنا ہے کہ نواز شریف کی تمام رپورٹس پر مشاورت جاری ہے اور دل کے معاملے پر ماہر امراض قلب کی خدمات حاصل کر لی ہیں۔ نواز شریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان خان بھی سروسز ہسپتال میں موجود ہیں جو ان سے ملاقات کرکے حالیہ رپورٹس کا جائزہ لیں گے۔

اس سے قبل ہسپتال ذرائع کا کہنا تھا کہ نواز شریف کے دل کا مرض پرانا ہے لیکن ہارٹ ٹروپ آئی ٹیسٹ نیگیٹو آنے پر واضح ہو گیا انہیں جیل میں ہارٹ اٹیک نہیں ہوا۔

ہسپتال ذرائع کا کہنا ہے کہ نواز شریف کے بائیں گردے میں 3 ملی میٹر کی 2 پتھریاں ہیں جو لتھوٹرپسی کے ذریعے نکالی جا سکتی ہیں۔

دوسری جانب لیگی متوالے اپنے قائد سے اظہار یکجہتی کے لیے سروسز ہسپتال کے باہر لگائے گئے کیمپ میں موجود ہیں۔ کارکن قرآن خوانی کے بعد نواز شریف کی صحت کے لیے دعائیں مانگ رہے ہیں۔


ای پیپر