نئے سیاسی نقشہ پیش کرنےکے بعد وزیر اعظم عمران خان کا ایک اور دبنگ اعلان
04 اگست 2020 (19:45) 2020-08-04

اسلام آباد :وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ پاکستان نے مقبوضہ کشمیر کو شامل کرکے نیا سرکاری نقشہ بنایا ہے، پاکستان کا نیا سرکاری نقشہ کشمیریوں کے اصولی مئوقف کی تائید جبکہ ہندوستان کے غاصبانہ اقدام کی نفی کرتا ہے، آج سے یہی نقشہ پاکستان کا نیا نقشہ ہے، یہ نقشہ سکولوں، کالجز کے نصاب میں بھی شامل کیا جائے گا، نئے نقشے کی اپوزیشن اور کشمیری لیڈرشپ نے بھی تائید کی ۔

پاکستان کے نئے سرکاری نقشے کی تقریب رونمائی سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آج تاریخی دن ہے کہ ہم پاکستان کا پولیٹیکل میپ دنیا کے سامنے لے کر آئے ہیں۔ نیا سرکاری نقشہ پاکستان کی ترجمانی کرتا ہے۔ آج سے یہی نقشہ پاکستان کا نیانقشہ ہے۔ نئے نقشے کی اپوزیشن اور کشمیری لیڈرشپ نے بھی تائید کی ہے،پاکستانی قوم کی امنگوں اور کشمیر کے لوگوں کے اصولی مئوقف کی ترجمانی اور تائید کرتا ہے۔

پچھلے سال 5 اگست کوجو ہندوستان نے غاصبانہ اور غیرقانونی قدم اٹھایا تھا اس کی نفی کرتا ہے۔ آج سے ہمارا سرکاری پولیٹیکل نقشہ یہ ہوگا۔ یہی نقشہ جامعات، کالجز اور سکولوں میں نصاب میں بھی آیا کرے گا۔ وزیراعظم نے کہا کہ سرکاری نقشہ پہلا قدم ہے کشمیر کیلئے سیاسی جدوجہد جاری رکھیں گے، کشمیر کے لوگوں کا حق ہے کہ وہ پاکستان کے ساتھ جانا چاہتے یا ہندوستان کے ساتھ ہیں،یہ اقوام عالم نے کشمیریوں کو حق دیا ،لیکن وہ ان کو نہیں دیا گیا۔


ای پیپر