پاکستان مکمل طور پر کشمیریوں کے ساتھ ہے : شاہد خاقان عباسی
04 اپریل 2018 (18:51) 2018-04-04

مظفر آباد: وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ پاکستان مکمل طور پر کشمیریوں کے ساتھ ہے ‘ہندوستانی فوج نے ریاستی دہشتگردی کا مظاہرہ کرتے ہوئے 17 سے زائد معصوم کشمیریوں کو شہید کیا‘ 1947 میں ہندوستان نے اپنی فوج کشمیر میں داخل کی اور بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی کی‘ بچوں کی ادویات اور دودھ کی کمی باعث بچوں کی اموات کا خدشہ ہے ‘ میں نے اقوام متحدہ سے مقبوضہ کشمیر کے حل کیلئے نمائندہ مقرر کرنے کی درخواست کی ہے ‘7 دھائیاں گزرنے کے باوجود کشمیریوں نے غاصبانہ قبضے کو قبول نہیں کیا ‘اپنی آزادی کیلئے برسرپیکار ہیں۔

آزاد کشمیر کونسل و قانون ساز اسمبلی کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ ہندوستانی فوج نے ریاستی دہشت گردی کا مظاہرہ کرتے ہوئے 17 سے زائد معصوم کشمیریوں کو شہید کیا ان پرتشدد کارروائیوں میں دو سو سے زائد افراد زخمی ہوچکے ہیں ان پرتشدد کارروائیوں میں ہندوستانی فوج نے جنازوں پر بھی حملے کئے۔ یہ واقعات ہندوستان کی پالیسی کا عکاس ہے ۔ آج بھی مقبوضہ کشمیر میں معاملات زندگی مفلوج ہیں انٹرنیٹ سروسز بند کردی گئی ہیں بچوں کی ادویات اور دودھ کی کمی کے باعث بچوں کی اموات کا خدشہ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ دنیا ان معاملات سے بخوبی آگاہ ہے ۔ 1947 میں ہندوستان نے اپنی فوج کشمیر میں داخل کی اور بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی کی۔ اس معمالے پر معاملہ اقوام متحدہ میں لے جایا گیا وہاں اس بات پر اتفاق ہوا کہ کشمیر میں رائے شماری کے بعد کشمیر کے مستقبل کا فیصلہ کیا جائے گا۔ بعد ازاں ہندوستان اپنے وعدوں سے پیچھے ہٹ گیا آج سات دہائیاں گزرنے کے باوجود کشمیری عوام نے اس غاصبانہ قبضے کو قبول نہیں کیا اور اپنی آزادی کے لئے برسرپیکار ہیں۔ پاکستان کشمیری بھائیوں کے موقف میں ان کے ساتھ کھڑا ہے ۔

وزیراعظم نے کہا کہ کشمیر کا فیصلہ سلامتی کونسل کی قراردادوں کے مطابق استصواب رائے کے مطابق حل ہونا چاہئے۔ کشمیری بہن بھائیوں کا راستہ کسی بھی طریقے سے نہیں روکا جاسکتا پاکستان مکمل طور پر کشمیریوں کے ساتھ ہے ۔ ہندوستان کو اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے کمشنر اور اسلامی تعاون تنظیم کمیشن کو مقبوضہ کشمیر آنے کی اجازت دینی چاہئے۔


ای پیپر