Source : Yahoo

بھارتی مس یونیورس کی انڈین سول سروس میں ملازمت کیلئے تیاری
03 ستمبر 2018 (19:04) 2018-09-03

ممبئی: بھارتی ماڈل اور بھارتی مقابلہ حسن کی فاتح نیہال شوداساما کا کہنا ہے کہ وہ عالمی مقابلہ حسن مس یونیورس 2018 کے بعد انڈین سول سروس میں ملازمت کے لیے تیاری شروع کریں گی۔

بھارتی ماڈل نیہال شوداساما رواں برس دسمبر بنکاک میں منعقد ہونے والے مقابلہ حسن مس یونیورس 2018 میں بھارت کی نمائندگی کریں گی۔یاماہا فاسکینومس دیوا مس یونیورس 2018 کی فاتح کا کہنا تھا کہ ماضی کی مس یونیورس کی طرح ان کا بالی ووڈ میں انٹری کا کوئی ارادہ نہیں۔نیہال شوداساما نے بھارتی اخبارسے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میں انڈین سول سروس میں بھرتی ہوجاں گی، مقابلہ حسن کے بعد میرا یہی مقصد ہے، بالی ووڈ میں آنے کا کوئی ارادہ نہیں۔

22 سالہ حسینہ کو فٹنس ، ایتھیلٹس، رقص اور کھانا پکانے میں دلچسپی ہے، تو کیا انہوں نے ہمیشہ سے مقابلہ حسن میں حصہ لینے کا خواب دیکھا تھا اس سوال کے جواب میں نیہال کا کہنا تھا کہ میرا تعلق ایک گجراتی خاندان سے ہے جہاں ماڈلنگ ایک عام بات نہیں، میں اپنے خاندان کی پہلی لڑکی ہوں جو یہاں تک پہنچی ہوں۔

انہوں نے کہا کہ اس کے علاوہ میں نے یہاں تک پہنچنے میں بہت مشکلات دیکھیں کیونکہ میں 13 سال کی تھی جب میں نے اپنی ماں کو کھو دیا اور اپنے والد کو منانا میرے لیے ناممکنات میں سے تھا۔لیکن اب میں اس مقام پر ہوں تو وہ کافی حد تک راضی ہیں اور انہیں مجھ پر فخر ہے۔نیہال شوداساما نے کہا کہ 18 سال سے بھارت نے مس یونیورس کا اعزاز حاصل نہیں کیا، میں یہ اعزاز جیتنا چاہتی ہوں۔


ای پیپر