سکرین شوٹ

نیب کا حکومت سے کوئی گٹھ جوڑ نہیں: چیئرمین نیب
03 اکتوبر 2019 (14:25) 2019-10-03

اسلام آباد: نیب کا حکومت سے کوئی گٹھ جوڑ نہیں، میری منظوری تک پلی بارگین نہیں ہوسکتی، چیئرمین نیب جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نے واضح کر دیا۔

تاجروں سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین نیب نے کہا کہ سپریم کورٹ نے منی لانڈرنگ کے کئی کیس ہمارے حوالے کیے، نیب اپنے دائرہ اختیار سے نکل کر کوئی اقدام نہیں کرتا، ہم نے ٹیکس کا کوئی کیس نہیں لیا، ٹیکس معاملات کا کوئی کیس نیب نہیں دیکھے گا، ٹیکس سے بچنا اور منی لانڈرنگ مختلف معاملات ہیں، ٹیکس معاملات کے تمام کیسز ایف بی آر کو بھیجیں گے، پاناما لیکس کے دیگر کیسز بھی چل رہے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ ملک اس وقت 100 ارب ڈالر کا مقروض ہے۔ 100 ارب روپے کہاں خرچ ہوئے؟ ہسپتال میں ایک بستر پر 4، 4 مریض ہیں، ملک میں بہت سے مافیاز کی داستانیں ہیں، کسی کی جیب سے پیسہ نکالنا بہت مشکل کام ہے۔ قانون میں لکھا ہوا ہے پلی بارگین رضاکارانہ فعل ہے۔


ای پیپر