PTI does not want to postpone election reforms any more: Information Minister Fawad Chaudhry
کیپشن:   فائل فوٹو
03 May 2021 (14:09) 2021-05-03

اسلام آباد: وزیر اطلاعات فواد چودھری نے کہا ہے کہ اگر مسلم لیگ(ن)،پیپلز پارٹی یا دوسری جماعتیں الیکشن ریفارمز نہیں چاہتیں تو کھل کر بتائیں، پی ٹی آئی الیکشن ریفارمز کو مزید التوا میں نہیں رکھنا چاہتی۔ پاکستان کے مسائل وسعت سوچ کے بغیر حل نہیں ہوں گے۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ہر انتخاب کے بعد الزامات کا نہ ختم ہونے والا سلسلہ شروع ہو جاتا ہے، جھگڑا ہوتا ہے، یہ نتیجہ منظور ہے اور یہ منظور نہیں، اصل معاملہ انتخاب اور اس کے نتیجے پر اعتماد کا ہے۔

فواد چودھری نے کہا کہ وزیراعظم نے کرکٹ میں نیوٹرل امپائر کا تصور متعارف کرایا، وہ ایسا انتخاب چاہتے ہیں جس کے بعد جیتنے والے پر کوئی انگلی نہ اٹھا سکے۔ کراچی میں جو ضمنی الیکشن ہوا، اس میں بھی دھاندلی کا شور مچایا جا رہا ہے۔ دھاندلی کا شور مسلم لیگ (ن) مچا رہی ہے اور الزام پیپلز پارٹی پر لگا رہی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم نے اپوزیشن سے بارہا کہا کہ آئیں مل کر الیکشن ریفارمز طے کرتے ہیں لیکن اپوزیشن نے ہر بار یوٹرن لیا ہے۔ وزیراعظم نے پہلے دن ہی نیوٹرل انتخابات پر اپوزیشن سے بات کی تھی۔ انتخابی اصلاحات نہیں ہوں گی تو ہر انتخاب کے بعد رونا دھونا ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ ہم الیکٹرانک ووٹنگ مشین لانا چاتے ہیں جس سے رزلٹ 12، 12 گھنٹے نہ رکے رہیں۔ الیکٹرانک ووٹنگ سے الیکشن کے 20 منٹ بعد نتائج آنا شروع ہو جائیں گے۔ 

ان کا کہنا تھا کہ ہم ایسا الیکشن چاہتے ہیں کہ ہارنے والا بھی نتیجے کو قبول کرے۔ عمران خان کا نظریہ ہے اپوزیشن آئے اور اصلاحات پر بات کرے۔ ہم انتخابی نظام میں اصلاحات تجویز کر رہے ہیں۔اپوزیشن اصلاحات کیلئے تیار نہیں تو سیاسی، جمہوری ترقی رک جائے گی۔


ای پیپر