فوٹو/ آفیشل فیس بُک پیج

مونس الٰہی نے پنجاب میں نئے بلدیاتی نظام کی مخالفت کر دی
03 May 2019 (15:06) 2019-05-03

لاہور: پنجاب میں حکومت کے اتحادی مونس الہٰی نے نئے بلدیاتی نظام کی مخالفت کر دی۔ کہتے ہیں خیبر پختونخوا کا بڑے صوبے سے موازنہ نہیں کر سکتے اور انتظامی اخراجات 6 گنا بڑھ جائیں گے۔

ق لیگ کے رہنما مونس الہٰی نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر ٹویٹ کرتے ہوئے کہا 4 ہزار یونین کونسلز، 24 ہزار ویلیج کونسلز اور پنچائیت بھی ہو گی۔ جس کے انتظامی اخراجات میں 6 گنا اضافہ ہو جائے گا اور نئے بلدیاتی نظام میں سالانہ 8 ارب تنخواہوں کی مد میں جائیں گے۔

مونس الٰہی کا مزید کہنا تھا پنجاب اور خیبرپختونخوا کا موازنہ نہیں کیا جا سکتا کیونکہ دونوں صوبوں کی آبادی میں بڑا فرق ہے۔ تحریک انصاف کو خیبرپختونخوا کا فارمولہ کاپی پیسٹ نہیں کرنا چاہیے اور اس حکمت عملی کو دوبارہ سے دیکھنے کی ضرورت ہے۔


ای پیپر