فائل فوٹو

حکومتی اتحادیوں کے تحفظات دور نہ ہوسکے، تبدیلی سرکار کی مشکلات میں اضافہ
03 فروری 2020 (10:10) 2020-02-03

لاہور: حکومتی اتحادیوں کے تحفظات دور نہ ہوسکے، مسلم لیگ ق کے سربراہ چودھری شجاعت حسین کا کہنا ہے کہ الیکشن سے پہلے تحریک انصاف سے تحریری معاہدہ ہوا جس پر کوئی عملدرآمد نہ ہو سکا۔

ق لیگ کا مذاکراتی کمیٹی کی تبدیلی کا شکوہ، چودھری شجاعت حسین کی سربراہی میں لاہور میں اہم اجلاس، چودھری شجاعت حسین اور چودھری پرویزالٰہی نے اجلاس میں کہا پی ٹی آئی قیادت کو باور کرایا جائے کہ تبدیلی اچھی بات ہے لیکن بار بار تبدیلی کی روایات اچھی نہیں۔

بی این پی مینگل نے بھی حکومتی مذکراتی ٹیم پر تحفظات کا اظہار کر دیا، سیکرٹری جنرل بی این پی مینگل سینیٹر جہانزیب جمالدینی کا کہنا ہے کہ نئی ٹیم کو کچھ علم نہیں، ان سے مذاکرات وقت کا ضیاع ہوں گے۔

ادھر چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی کے جانے پر ایم کیو ایم پاکستان نے کابینہ میں واپسی کا کوئی فیصلہ نہ کیا۔

 وفاقی وزیر علی زیدی کا کہنا ہے کہ ایم کیو ایم ناراض ہوتی تو حکومت چھوڑ دیتی، متحدہ قومی موومنٹ سے کمیٹی کے ذریعے مذاکرات جاری ہیں۔


ای پیپر