French President's big announcement
03 دسمبر 2020 (22:23) 2020-12-03

پیرس :فرانسیسی صدر اسلام دشمنی میں پاگل ہو گیا ،فرانس میں قائم مساجد کیخلاف انتہائی افسوسناک فیصلہ کر لیا گیا ،فرانسیسی صدر نے فرانس میں قائم 76 سے زائد مساجد پر دہشتگردی کا شبہ ظاہر کرتےہوئے تلاشی لینے کا فیصلہ کر لیا ۔

تفصیلات کے مطابق اسلام دشمنی میں فرانسیسی صدر ایک کے بعد ایک شرمناک فیصلے سنا رہا ہے ،جس میں اب تازہ ترین اطلاعات کے مطابق فرانسیسی حکومت نے 76 سے زائد مساجد پر دہشتگردی کا شبہ ظاہر کرتے ہوئے ان کی تلاشی لینے کا فیصلہ کر لیا ،فرانسیسی وزیر داخلہ نے کہا ہے کہ علیحدگی پسندوں کے عزائم سے متعلق معلومات کے لئے ان مساجد کی تلاشی لی جائے گی۔

موجودہ فرانسیسی صدر ایمانویل میکرون کی تین سالہ حکومت میں اب تک 43 مساجد بند کی جا چکی ہیں، فرانسیسی حکومت کی جانب سے  مسلم مخالف قوانین بھی متعارف کروائے جارہے ہیں ، جس کے  تحت مسلمان بچوں کی گھروں ميں تعلیم پر پابندی لگا دی جائے گی۔مذہبی بنيادوں پر سرکاری حکام سے الجھنے پرسخت سزائيں دی جائیں گی۔


ای پیپر