New system, courts, jails, Fawad Chaudhry, Federal minister, science, technology
03 دسمبر 2020 (14:58) 2020-12-03

اسلام آباد: وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چودھری نے کہا کہ عدالتوں اور جیلوں کیلئے نیا سسٹم تیار کرنے جا رہے ہیں ، نئے سسٹم سے روزانہ ججوں اور قیدیوں کو سفر کی مشکل سے نکالا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے فواد چودھری نے کہا کہ حکومت کروڑوں روپے قیدیوں کی پیشی پر خرچ کرتی ہے، نظام لا رہے ہیں کہ قیدیوں کو روزانہ عدالت نہ لانا پڑے، وفاقی وزیر نے کہا کہ حکومت ایسا نظام لائیں گی کہ ججز ویڈیو لنک پر کیسز کی سماعت کرسکیں گے۔

انہوں نے کہا کہ سائنس کی کوئی حد نہیں، ٹیکنالوجی سائنس کو ہمارے سامنے لے کر آتی ہے۔ اگر ترقی کرنی ہے تو ہمارا انحصار ٹیکنالوجی ، سائنس اور عقل پر ہونا چاہئے۔ فواد چودھری نے کہا کہ ملک پی ڈی ایم جلسوں، سیاسی خبروں سے ترقی نہیں کرے گا، ترقی کیلئے سائنس اور ٹیکنالوجی پر انحصار کرنا ہوگا۔

وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی نے کہا کہ مستقبل بہت پیچیدہ ہے، فائیو جی ایک اور بڑا انقلاب ہوگا، 5 جی کے بعد واشنگٹن میں بیٹھ کر لاہور میں سرجری کرسکیں گے۔ حکومت اینی میشن اور ویڈیو گیمنگ کیلئے بھی کوششیں کر رہی ہے، اینی میشن کیلئے ہمیں آرٹسٹ چاہئیں۔ انہوں نے کہا کہ ٹیکنالوجی میں جو تبدیلیاں آئیں گی اس سے گھبرانا نہیں ہے۔ عالمی وبا کے بعد ویڈیو میٹنگ بڑھی ہے۔ ویڈیو کانفرنسنگ کے نتیجے میں وزارت میں بھی میٹنگز باقاعدگی سے ہو رہی ہیں۔

فواد چودھری نے کہا کہ ٹیکنالوجی کی مدد سے پرچے آؤٹ ہونے میں بھی کمی آئے گی۔ کرپٹ لوگ کمپیوٹر چلانے والے کو تو خرید سکتے ہیں لیکن کمپیوٹر کو نہیں خریدا جا سکتا۔

انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر ، ڈرائیور، اساتذہ اور مکینکس کی نوکریاں جلد ختم ہوجائیں گی، ان سب کی جگہ بہت جلد ٹیکنالوجی لے گی، وفاقی وزیر نے کہا کہ 15 سے 20 سال میں گاڑیاں بجلی کے نظام پر منتقل ہوجائیں گی۔ مستقبل میں معلوم نہیں کون سی نوکریاں لوگوں کو دستیاب ہوگی۔


ای پیپر