file photo

شریف گروپ آف کمپنیز کے سی ایف او جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے
03 اگست 2020 (13:55) 2020-08-03

لاہور: شریف گروپ آف کمپنیز کے سی ایف او محمد عثمان کے جسمانی ریمانڈ کی درخواست پر سماعت، نیب پراسیکیوٹر وراث علی جنجوعہ نے دلائل دیئے ہوئے کہا کہ محمد عثمان کو نیب میں گرفتار ملزمان کے بیانات پر گرفتار کیا گیا۔ محمد عثمان کی گرفتاری ٹھوس شواہد کی روشنی میں عمل میں لائی گئی۔ محمد عثمان شریف فیملیز کیخلاف منی لانڈرنگ کیلئے کام کرتا رہا۔

دوسری جانب سی ایف او محمد عثمان کے وکیل نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ محمد عثمان چارٹرڈ اکاؤنٹنٹ اور ایک قابل انسان ہے۔ محمد عثمان کو سیاسی بنیادوں پر گرفتار کیا گیا۔ 28 جولائی کو چیئرمین نیب نے منی لانڈرنگ کیس میں خود میڈیا کو پریس ریلیز جاری کرائی۔

دونوں جانب سے دلائل سننے کے بعد عدالت نے محمد عثمان کا 14 روزہ جسمانی ریمانڈ دیدیا اور محمد عثمان کو 17 اگست تک نیب کے حوالے کر دیا۔


ای پیپر