بھارت کشمیریوں کو اقلیت میں تبدیل کرنا چاہتا ہے :صدر آزاد کشمیر
02 ستمبر 2019 (17:30) 2019-09-02

لاہور :آزاد کشمیر کے صدر سردار مسعود خان نے لاہور میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مسئلہ کشمیر کا حل کثیر الجہتی سفارتکاری کے ذریعے ممکن ہے ،مقبوضہ کشمیر پر حملہ دراصل پاکستان پر حملہ ہے ،امن پسند دنیا کو اب بھارت کیخلاف لڑنا ہو گا ۔

صدر آزاد کشمیر نے لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے   کہا مقبوضہ کشمیر کے لوگوں کے پاس آٹا ،پانی اور ادویات ختم ہوچکی ہیں،کشمیر پر بھارتی قبضے کی کوشش کامیاب نہیں ہوگی ،مقبوضہ کشمیر پر حملہ دراصل پاکستان پر حملہ ہے ،امن پسند دنیا کو اب بھارت کیخلاف لڑنا ہو گا ،5اگست کو کشمیر پر نہیں پاکستان پر حملہ ہوا ، بھارت اپنے منصوبے کے تحت کشمیر یوں کو اقلیت میں تبدیل کرنا چاہتا ہے ،مقبوضہ میں بھارتی فوج نے مظالم کی انتہا کر دی ،کشمیر کے قبرستان کشمیری نوجوانوں سے بھر چکے ہیں ،9لاکھ قابض بھارتی فوج نہتے کشمیریوں پر ظالمانہ تشدد کر رہے ہیں ۔

انہوں نے مزید کہا کہ حکومت پاکستان کشمیریوں کی موثر ترجمانی کر رہی ہے ،عالم اسلام کو بھارت کی طرف سے کشمیریوں کو بربریت کا نشانہ بنائے جانے کا نوٹس لینا چاہیے ، بھارت نے کشمیریوں سے ان کی اپنی زمین چھین لی ہے ،اب بھارت کو جان لینا چاہیے کشمیر ی عوام اکیلے نہیں انکے ساتھ 22کروڑ پاکستانی شانہ بشانہ کھڑے ہیں ۔


ای پیپر