ہائیکورٹ نے سعودی ولی عہد کے اخراجات کی تفصیلات مانگ لیں
02 May 2019 (22:09) 2019-05-02

لاہور : لاہور ہائیکورٹ نے سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کی آمد پر اخراجات کی تفصیلات فراہم کرنے کی درخواست پر وفاقی حکومت کو 15مئی تک جواب جمع کروانے کی ہدایت کر دی۔ ہائیکورٹ کے جسٹس عاصم حفیظ نے معروف قانون دان اے کے ڈوگر کی درخواست پر سماعت کی۔

درخواست گزار نے موقف اختیار کیا کہ میڈیا رپورٹس کے مطابق سعودی ولی عہد کی آمد پر عوام کے 20کروڑ خرچ کیے گئے، 300لگڑری گاڑیاں کرائے پر لی گئیں،ایف 16اور ایف 17 نے مہمان کو ہوائی پروٹوکول دیا، جہازوں کے پروٹوکول آپریشنل پر عوام کے کروڑوں روپے خرچ کیے گئے، قائداعظم نے وزرا پر عوام کے پیسوں سے چائے پینے پر پابندی عائد کی تھی، سعودی ولی عہد کے استقبال میں عوامی پیسوں کا ضیاع اسلامی قوانین کے منافی ہے۔

معزز عدالت سے استدعا ہے کہ معلومات تک رسائی کے قانون کے تحت عدالت اخراجات کی تمام تر تفصیلات فراہم کی جائیں۔عدالتی حکم کے باوجود وفاقی حکومت نے جواب داخل نہ کروایا۔ عدالت نے 15 مئی تک وفاقی حکومت کو جواب جمع کرانے کی ہدایت کر تے ہوئے سماعت ملتوی کر دی۔


ای پیپر