سری لنکا کا بھارت اور جاپان کو گہرے سمندر کی بندرگاہ دینے کا فیصلہ
سورس:   فوٹو/بشکریہ اے ایف پی
02 مارچ 2021 (22:00) 2021-03-02

کولمبو: سری لنکا نے بھارت اور جاپان کو تزویراتی اہمیت کی حامل گہرے سمندر کی بندرگاہ حوالے کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ 

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق سری لنکن حکومت کے ایک عہدیدار نے نام نہ ظاہر کرنے کی شرط پر بتایا کہ سری لنکا کی جانب سے بھارت اور جاپان کو گہرے سمندر کی بندرگاہ حوالے کرنے کی پیشکش کی جائے گی اور یہ بندرگاہ تجارتی و دفاعی لحاظ سے بھی اہمیت کی حامل ہو گی۔ سری لنکا خطے میں چین کے بڑھتے ہوئے اثرات کو روکنے کے لیے تجارتی طور پر توازن قائم کرنا چاہتا ہے۔

رپورٹ کے مطابق سری لنکن حکومت کی جانب سے گذشتہ ماہ اچانک ایک معاہدہ سامنے لایا گیا تھا جس کے تحت جاپان اور بھارت مشترکہ طور پر کولمبو میں ایسٹ کنٹینر ٹرمینل تیار کریں گے جب کہ اس کے قریب ہی 500 ملین ڈالر سے تیار کی گئی کنٹینر جیٹی ہے جو کہ چین کے زیرانتظام ہے۔

سری لنکن حکومت کے ترجمان کا کہنا ہے کہ نئے ٹرمینل کی تعمیر کے لیے صرف بھارت اور جاپان سے بات چیت جاری ہے۔ کابینہ نے فیصلہ کیا ہے کہ جاپان اور بھارت کو بندرگاہ کا 85 فیصد شیئر دیا جائے گا اور انہی بنیادوں پر یہ معاہدہ ہوگا جن پر چین کے ساتھ معاہدہ کیا گیا ہے۔ تاہم یہ بات واضح نہیں ہےکہ جاپان اور بھارت آپس میں کتنا حصہ رکھیں گے۔

سری لنکن حکومت کے مطابق کولمبو میں بھارتی ہائی کمشنر نے سری لنکن حکومت کی پیشکش منظور کرلی ہے تاہم جاپان اور بھارت کی جانب سے اس حوالے سے ابھی کوئی بیان سامنے نہیں آیا ہے۔

بشکریہ(نیو نیوز)


ای پیپر