مارچ کو واٹرایکشن مہینے کے طور پر منا رہے ہیں،آئی آر ایس پی
02 مارچ 2018 (20:37) 2018-03-02

اسلام آباد :دنیا بھر کی طرح پاکستان میں بھی مارچ کے مہینے کو واٹر ایکشن کے مہینے کے طور پر منایا جا رہا ہے۔ اقوام متحدہ ہر سال 22 مارچ کو پانی کے عالمی دن کے طور پر مناتا ہے۔ اس حوالے سے فافن کی شریک کار تنظیم انٹیگریٹڈ ریجنل سپورٹ آرگنائزیشن (آئی آر ایس پی ) نے گزشتہ روز اپنے ایک اجلاس میں واٹر ایکشن منتھ کی اہمیت پر روشنی ڈالی، اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے تنظیم کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر سید شاہ ناصر خسرو نے کہا کہ ہم اس مہینے کو برسہا برس سے منا رہے ہیں اور آج بھی ہمارے یہاں جمع ہونے کا مقصد لوگوں کو پینے کے صاف پانی کی اہمیت و افادیت سے آگاہ کرنااور لوگوں کو یہ باور کرانا ہے کہ پانی خاص طور پر پینے کے صاف پانی کا لوگوں کی انفرادی و اجتماعی صحت و خوشحالی کیساتھ کتنا گہرا تعلق ہے۔

تنظیم کی طرف سے جاری بیان کے مطابق مارچ کو واٹر ایکشن منتھ کے طور پر منانے کابڑا مقصد لوگوں کو ایک ایسا اجتماعی پلیٹ فارم مہیا کرنا ہے جہاں وہ نہ صرف اس حوالے سے درپیش مسائل کو اجاگر کریں بلکہ درپیش چیلنجز سے نپٹنے کی منصوبہ بندی بھی کر سکیں۔ شاہ ناصر خسرو نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم معاشرے میں ایسی پائیداراور منظم تبدیلی کے خواہشمند ہیں جہاں ہر ایک کو پینے کے صاف پانی اور صحت کی دیگر سہولیات تک مساوی اور آسان رسائی حاصل ہو اور عالمی سطح پر پانی اور حفظان صحت کے مسائل کو ترجیح بنایا جائے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان نے پہلے صدی کے ترقیاتی اہداف کے حصول کے معاہدے کی توثیق کی اور 24 میں سے 9 اہداف کا حصول ممکن بنایا اور اب پاکستان نے 2030 کے ترقیاتی اہداف کے معاہدے کی توثیق کی ہے اس لئے لازم ہے کہ ہماری کوششوں کی رفتار اور دائرہ بڑھایا جائے تاکہ پاکستان دیگر ترقی پذیر ممالک کی نسبت ان اہداف کے حصول کی جدوجہد میں زیادہ پیچھے نہ رہ جائے۔


ای پیپر