پاکستان میں ججز کی تاریخ بہت شاندار رہی ہے : سعید غنی
02 جون 2019 (23:08) 2019-06-02

لاہور: پاکستان پیپلزپارٹی کے سندھ کے وزیر بلدیات سعید غنی نے کہا ہے کہ اگر جسٹس (ر) افتخار چوہدری جیسے جج کیلئے لوگ باہر نکل سکتے ہیں تو جسٹس فائز عیسیٰ تو ان سے سو گنااچھے جج ہیں‘ جسٹس فائز عیسیٰ نے اپنے فیصلوں سے اپنی عزت اور مقام بنایا ہے اور حکومت کی جانب سے انکے خلاف ریفرنس اس کی نا اہلی اور نالائقی ہے۔

 میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سعید غنی نے کہا کہ پاکستان میں ججز کی تاریخ دیکھیں تو بہت سے شاندار ججز رہے ہیں جن کی آج بھی عزت ہے اور ان کانام احترام سے لیا جاتا ہے اور ایسے ججز بھی ہیں جنہیں تاریخ میں برے الفاظ سے یاد کیا جاتا ہے اور اچھے اور برے ججز آتے رہیں گے۔ جسٹس فائز عیسیٰ کی ججمنٹ پڑھی ہیں اور انہیں سنا ہے ،اس وقت اچھے ججز میں جسٹس فائز عیسی کا نام بھی شامل ہے اور ان کا ایک مقا م ہے ۔انہوں نے ٹی وی ٹکرز اور عوامی جذبات سے کھیل کر نہیں بلکہ اپنے فیصلوںاور ججز کیلئے موجود کوڈ آف کنڈکٹ پر عمل کر کے اپنا مقام بنایا ہے ،حکومت کی جانب سے ان کے خلاف ریفرنس لانا بد قسمتی ،نا اہلی او رنا لائقی ہے ۔

ایک  سوال کے جواب میں سعید غنی نے کہا کہ جب سے پیپلز پارٹی بنی ہے یہی کہا جارہا ہے کہ پیپلز پارٹی آخری سانسیں لے رہی ہیں لیکن یہ اپنی قیادت اور کارکنوں کی قربانیوں سے زندہ ہے ،اس کے خلاف جس طرح کی سازشیں ہوتی رہی ہیں اگر کوئی اور جماعت ہوتی تو اس کی نسلیں تباہ ہو جاتیں لیکن پیپلز پارٹی آج بھی شان سے کھڑی ہے ۔تھا ہم اپوزیشن کر کے دکھائیں گے ، بلاول بھٹو اس وقت اپوزیشن کی قیادت کر رہے ہیں اور ان تما م یشوز پر بات کر رہے ہیں جن پر بات کرتے ہوئے بعض لوگ گھبراتے ہیں اور کھل کر بات نہیں کرتے ۔

انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی نے ہمیشہ یہ بات کہی ہے اور ثابت کیا ہے کہ بیشک ہمیں عدالتوں کے فیصلوں سے اختلاف ہو لیکن ہم عدالتوں کااحترام کرتے ہیں، میں نے سپریم کورٹ میں یہ نہیں کہا تھاکہ میں سپریم کورٹ کے حکم پر عملدرآمد نہیں ہونے دوںگا بلکہ میں نے کہا تھاکہ میں غریب لوگوں کے گھروں کو توڑنے کی بجائے استعفیٰ دینے کو ترجیح دوں گا اوراس آپشن کو استعمال کرنا یا نہ کرنا میرا اختیار ہے ۔ سندھ میں اپوزیشن مضبوط نہیں ہو رہی بلکہ پیپلز پارٹی کے ووٹ بڑھے ہیں ، ایم کیو ایم کی سیاسی حیثیت ختم ہو چکی ہے ۔


ای پیپر