Source : ebuzztoday.com

نصرت فتح علی خان کے گیت گانے سے قبل مجھ سے اجازت لینا ہوگی :ندا نصرت
02 جون 2018 (22:21) 2018-06-02

لاہور:پاکستانی معروف قوال و غزل خواں نصرت فتح علی خان (مرحوم) کی بیٹی ندا نصرت نے والد کے گائے گیت ، غزلیں ، ملی نغمے اور قوالیاں گانے والوں کے خلاف قانونی کارروائی کا فیصلہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ نصرت فتح علی خان کے گیتوں کے رائٹس میرے پاس ہیں کیونکہ میں ان کی اکلوتی بیٹی ہوں، میرے علاوہ یہ حقوق کسی اورکے نہیں ہیں،جہاں تک بات نصرت فتح علی خان کے گائے گیتوں اورقوالیوں کوپرفارم کرنے کی ہے تواس کےلئے جو بھی نصرت فتح علی خان کے گیت گائے گا اسے پہلے مجھ سے باقاعدہ اجازت لینا ہوگی.

جوبھی ایسانہیں کرے گا، اس کیخلاف قانونی کارروائی کا حق محفوظ رکھتی ہوں۔ہفتہ کولاہور میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے معروف پاکستانی قوال و غزل خواں نصرت فتح علی خان کی بیٹی ندا نصرت نے کہا کہ میں پاکستان کے عظیم قوال استاد نصرت فتح علی خاں مرحوم کی اکلوتی بیٹی ہوں اور آج میں اپنی پہلی پریس کانفرنس کر رہی ہوں۔ انہوں نے کہا کہ میرے والد عوام کے ہردلعزیز فنکارتھے، ان کے چاہنے والے پوری دنیا میں موجود ہیں، میرے والد کے گیتوں کے رائٹس میرے پاس ہیں۔

میرے علاوہ یہ حقوق کسی اورکے نہیں ہیں، میں ان کی اکلوتی وارث ہوں،بغیرمیری اجازت کے لوگوں نے میرے والد کے گیت گائے اورمالی فائدہ اٹھایا،جہاں تک بات ان کے گائے گیتوں اورقوالیوںکوپرفارم کرنے کی ہے تواس کےلئے انہیں مجھ سے باقاعدہ اجازت لینا ہوگی، جوبھی ایسانہیں کرے گا، اس کیخلاف قانونی کارروائی کا حق محفوظ رکھتی ہوں۔ انہوں نے کہا کہ اس کے علاوہ سوشل میڈیا پر ندا خان کے نام سے خود کواستاد نصرت فتح علی خاں کی بیٹی ظاہرکرنے والی میرے والد کے چاہنے والوں کودھوکہ دے رہی ہیں۔ وہ کھوکھرپروڈکشنز کے نام سے کام کررہی ہیں ، جوکہ میرے نزدیک دھوکہ دہی کے سوا کچھ نہیں ہے۔ندا نصرت نے کہا کہ پاکستان کے ساتھ ساتھ پڑوسی ملک بھارت میں بھی میرے والد کے گائے گیت، غزلیں اورقوالیاں گا کرمالی فائدہ اٹھانے والوں کے خلاف بھی قانونی کارروائی کرونگی۔

یہ میری پہلی پریس کانفرنس ہے اوراس کے ذریعے میں جعلسازی کرنے والوںکو وارننگ دینا چاہتی ہوں۔ایک سوال کے جواب میں ندا نے کہا کہ استاد راحت فتح علی خاں میرے بھائی ہیں، ان کی اہلیہ کا نام بھی ندا ہے، لیکن وکی پیڈیا پرغلط معلومات فراہم کی گئی ہے۔انھوں نے کہا کہ میں نے اپنے والد کے نام سے دی رئیل این ایف اے کے ایک ادارہ قائم کیا ہے، جس کے پلیٹ فارم سے ہم نوجوانوںکوگانے کا موقع فراہم کریں گے۔


ای پیپر