Photo Credit INP

انتخابات میں تاخیر کرنے اور کروانے والوں کیخلاف ن لیگ کا اہم فیصلہ
02 جون 2018 (20:46) 2018-06-02

لاہور: مسلم لیگ  (ن) کے پار لیمانی بورڈ نے انتخابات میں تاخیر کرنے اور کروانے والوں کا ڈٹ کر محاسبہ کرنے کی قرار داد منظور کر لی‘(ن) لیگ کوتوڑنے کےلئے ہونےوالے  مبینہ سازشیں بھی ناکام بنانے کےلئے تمام حالات کا ڈٹ کر مقابلہ کر نے کی حکمت عملی بنا لی گئی ‘پنجاب سمےت پورے ملک  میں بھر پور انتخابی مہم کےلئے پارٹی امید واروں کو جلد ازجلد ٹکٹیں دینے کا فیصلہ‘پارٹی ٹکٹ پارٹی سے مخلص اور وفادار لوگوں کو دیئے جائیں گے۔

پارلیمانی بورڈ ٹکٹس دینے کے حوالے سے  سوموار  سے باضابطہ کام شروع کرے گا‘ امیدواروں کے متعلق ڈویژنل کمیٹیوں کی رپورٹیں بھی حاصل کی جائیں گی‘انتخابی مہم میں عوام سے پانچ سالہ وفاقی اور پنجاب حکومت کی کار کردگی اور ووٹ کو عزت دو کے نعرے پر ووٹ مانگے جائیں گے جبکہ اجلاس سے خطاب کے دوران (ن)  لیگ کے قائد میا ں نوازشر یف نے کہا کہ پارٹی ٹکٹ مخلص اور وفا دار لوگوں کے دیئے جائیں گے ‘الیکشن موخر کرانے کی کوشش کرنے والی جماعت کو اندازہ ہو چکا کہ انتخابات میں مسلم لیگ ن جیتے گی۔

الیکشن کمیشن ایک طرف اعلان کرتا ہے الیکشن بروقت ہونگے ،دوسری طرف کاغذات نامزدگی جمع کرانے سے روک رہا ہے  یہ کیا ہورہا ہے ؟ذرائع کے مطابق ہفتے کے روز لاہور میں   ہونےوالے (ن) لیگ  کے پہلے پار  لیمانی بورڈ کے اجلاس میں مسلم لیگ (ن) کے تاحیا ت قائد محمد نواز شریف ،مرکزی صدر محمد شہبازشریف، چیئرمین راجہ ظفر الحق ،خواجہ سعد رفیق ‘سپیکر سردار ایاز صادق ، احسن اقبال ،پرویز رشید ،مریم نواز ، رانا ثنا اللہ خان ، مریم اورنگزیب ،چوہدری برجیس طاہر مشاہد حسین سید،انجینئر امیر مقام ، پرویز ملک ،راجہ اشفاق سرور، ثنا اءاللہ زہری ،رانا تنویر حسین ، سائرہ افضل تارڑ ، طارق فضل چوہدری ‘عابدشیر علی سمیت دیگر شر یک ہوئے اجلاس کے دوران ملک کی سیاسی صورتحال ،ٹکٹوں کی تقسیم کے فارمولے‘پانچ سالہ حکومتی کارکردگی اور لاہور ہائےکورٹ کے فیصلے سے پیدا ہونےوالے حالات اورآئندہ کی حکمت عملی کے حوالے سے معاملات کو حتمی شکل دی گئی جبکہ میڈیا رپورٹس کے مطابق پار لیمانی بورڈ نے انتخابات میں تاخیر کرنے اور کروانے والوں کا ڈٹ کر محاسبہ کرنے کی قرار داد منظور کر تے ہوئے اس بات کا عہد کیا  ہے کہ انتخابات کی راہ میں   آنےوالی تمام رکاوٹوں کو ناکام بنایا جائےگا۔

ذرائع نے بتایا کہ مسلم لیگ (ن)کو ٹکٹ لینے کے لیے 2 ہزار 475 درخواستیں موصول ہو چکی ہیں، پارلیمانی بورڈ 10 جون تک اپنی سفارشات مکمل کر لے گا جب کہ پارٹی ٹکٹوں کا حتمی فیصلہ نواز شریف کریں گے اجلاس میں شہباز شریف نے قائد نواز شریف کی ہر بات کی مکمل تائید کی جب کہ اس موقع پر نوازشریف نے کہا کہ پارٹی ٹکٹ صرف پارٹی کے وفاداروں کو ملے گااجلا س سے خطاب کرتے ہوئے (ن) لیگ کے قائد میاں نوازشر یف نے کہا کہ الیکشن کسی صورت ملتوی نہیں ہونے دیں گے ملک قبل از وقت الیکشن چاہنے والی جماعت اب راہ فرار اختیار کر رہی ہے یہ سیاسی جماعت اپنے اقدامات سے الیکشن موخر کرانے کی حمایت کر رہی ہے مگر کسی کو  کامیاب نہیں ہونے دیا جائیگا۔  نوازشریف نے کہا کہ انتخابی اصلاحات کمیٹی نے کاغذات نامزدگی میں متفقہ ترامیم کیں، پارلیمنٹ کے قانون کو سنگل بینچ کیسے مسترد کر سکتا ہے، یہ آئین اور قانون کو نہ ماننے والی بات ہے الیکشن مخر کرانے کے حربے اختیار کیے جارہے ہیں، الیکشن کمیشن ایک طرف اعلان کرتا ہے الیکشن بر وقت ہوں گے، دوسری طرف کاغذات نامزدگی جمع کرانے سے روک رہا ہے، اس صورتحال میں الیکشن کیسے بروقت ہوں گے؟ الیکشن بروقت نہ ہونے سے ریاست پاکستان کو نقصان پہنچے گا اور علاقائی آوازیں بھی اٹھیں گی۔اجلاس کے دوران شہبازشریف نے کہا کہ جو لوگ پارٹی چھوڑ کر گئے ان کا حساب ووٹر خود کر لیں گے، پوری جماعت کا صرف ایک بیانیہ ہے ووٹ کو عزت دوہے ہم قوم کے سامنے جائےں گے اور انکو بتائے کہ ہم نے ملک کو کےسے دہشت گردی ‘مہنگائی اور بجلی کی لوڈشےڈ نگ سمےت دےگر مسائل سے نجات دلا کر ترقی کی راہ پر گامزن کردےا ہے ۔


ای پیپر