مجھے افطار کی دعوت ہی نہیں دی گئی : فاروق ستار
02 جون 2018 (20:11) 2018-06-02

کراچی:متحدہ قومی موومنٹ پاکستان پی آئی بی کے رہنما ڈاکٹر فارو ق ستارنے کہاہے کہ مجھے افطار کی دعوت ہی نہیں دی گئی ، مجھے مہمان اداکار نہ بناتے، کہتے گھر کی افطار ہے آپ کو آناہے، خالد مقبول صدیقی جھوٹ بولیں لیکن کوئی حد رکھیں،سیاسی اکابرین اور عمائدین شہر سے جھوٹ بولا گیا،مسئلہ بہادرآباد والوں کی طرف سے ہے،میری پوری کوشش ہے ہم پھر ایک ہوجائیں۔


عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کر تے ہوئے انہوں نے کہا کہ خالد مقبول صدیقی جھوٹ بولیں لیکن کوئی حد رکھیں، مسئلہ بہادر آباد والوں کی طرف سے ہے۔انہوں نے کہا کہ سیاسی اکابرین اور عمائدین شہر سے جھوٹ بولا گیا،اچھے اخلاق کی جب بات ہوتی ہے تو اس میں سچ بولنا بھی شامل ہے۔ فاروق ستارنے کہا کہ میری طرف سے متحد ہوجانے میں کوئی کسرنہیں ہے، 5 مئی کے جلسے کے بعد سے بہادرآباد کی طرف سے کچھ اور آفرز کی جارہی ہیں، خالد مقبول صدیقی اپنی پہلے کی آفر سے ہٹ گئے ہیں، 5 فروری کی جو شرائط تھیں اس پرمیں جانے کو تیار ہوں۔انہوں نے کہاکہ 26مئی کو جنوبی سندھ صوبے کے مطالبے کے لئے جلسہ کرنے پر بہادر آباد والے نہیں مانے۔


ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا کہ ٹکٹ کسے دینا ہے، یہ بعد میں فیصلہ کرلیں گے، ساتھی کارکن کاغذات نامزدگی جمع کرائیں پھردیکھ لیں گے میں اور بہادرآباد کے ساتھی مل کرٹکٹ دیتے ہیں یا نہیں ۔انہوں نے کہاکہ مسئلہ بہادر آباد والوں کی طرف سے ہے، میری طرف سے یکجا ہونے میں کوئی کسر نہیں ہے، پارٹی کی تقسیم کا تاثر نہیں دینا چاہتا، میری پوری کوشش ہے ہم پھرایک ہوجائیں۔انہوں نے کہاکہ کاغذات نامزدگی کی تاریخ میں توسیع ہونی چاہیے، قبل از انتخابات دھاندلی کی نشاندہی کی ہے، نگراں وزیراعظم اور چیف الیکشن کمشنر دھاندلی کا نوٹس لیں۔میرے اپنے حلقے میں ایک سیٹ کم کردی گئی ہے۔


ای پیپر