سکرین شوٹ

پریس کانفرنس کے دوران فیصل واوڈا آپے سے باہر ہوگئے
02 جنوری 2019 (16:38) 2019-01-02

اسلام آباد: وفاقی وزیر آبی وسائل فیصل واوڈا نے کہا ہے کہ مہمند ڈیم کی تعمیر کا آغاز 13 جنوری سے کر رہے ہیں۔ ڈیسکون اور رزاق داؤد سے متعلق غلط فہمیاں پیدا کی گئیں۔

پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر نے کہا کہ کسی دباؤ میں نہیں آئیں گے، مکمل توجہ کام پر ہے۔ کچھ لوگوں کے منفی ایجنڈے کے باعث آج تک ڈیم نہیں بنائے جا سکے۔

انہوں نے مزید کہا کہ مہمند ڈیم کا کنٹریکٹ کوئی وزیر یا ماتحت ادارے نہیں دے سکتے۔ میں وزیراعظم اور عدلیہ کو جواب دہ ہوں۔ دشمن ملکوں کا کام ہے ڈیم کے ایشو کو متنازعہ بنائیں۔

وزیر آبی وسائل فیصل واوڈا پریس کانفرنس کے دوران آپے سے باہر ہوگئے۔ رپورٹر کی جانب سے سوال کیا گیا آپکی پارٹی گزشتہ دور میں دیے گئے ٹھیکوں پر تنقید کرتی رہی۔ اب آپ پر تنقید ہو رہی ہے تو آپ کو برا لگ رہا ہے، جواب میں فیصل واوڈا بولے آپ بزرگ ہیں، اگر آپکی جگہ کوئی ہوتا تو آپکا مائیک سائڈ پر پھینک دیتا۔

وفاقی وزیر کے جواب پر صحافیوں نے احتجاج کیا جس پر فیصل واوڈا پریس کانفرنس ادھوری چھوڑ کر چلے گئے۔ فیصل واوڈا کے رویے پر صحافیوں نے شدید احتجاج کیا۔

پریس کانفرنس کے دوران بھی پبلک اکاؤنٹ کمیٹی میں پیش ہونے کے معاملے پر فیصل واوڈا بولے میں ایک دن کے نوٹس پر پی اے سی میں نہیں آ سکتا میں کسی کے باپ کا نوکر نہیں۔ جیل سے آنے والا مجرم ہم سے سوال نہیں کر سکتا، میں نے ہدایت دے دی ہے کہ ایک دن کے نوٹس پر منسٹری سے کوئی نہ جائے۔ ہماری پروگریس پوچھنے سے پہلے اپنا حساب دو کہ جو تم نے ملک کو لوٹا۔


ای پیپر