میانمار، فوجی بغاوت کے بعد دارالحکومت میں انٹر نیشنل ائیر پورٹ بند
سورس:   فائل فوٹو
02 فروری 2021 (22:54) 2021-02-02

ینگون: میانمار میں دارالحکومت ینگون (رنگون) کے انٹرنیشنل ائیر پورٹ کو بند کر دیا گیا ہے اور 31 مئی تک پروازوں کو لینڈنگ اور ٹیک آف کی اجازت نہیں ہو گی۔

ادھر میانمار کی فوجی بغاوت کے بعد سلامتی کونسل کا ہنگامی اجلاس آج طلب کیا گیا ہے۔ غیر ملکی ذرائع کے مطابق سلامتی کونسل کے ورچوئل اجلاس میں میانمار میں فوجی بغاوت کے بعد پیدا ہونے والی صورتحال کا جائزہ لیا جائے گا۔

امریکی صدر جو بائیڈن نے میانمار میں فوجی بغاوت اور اقتدار پر قبضے کی شدید مذمت کرتے ہوئے جمہوریت کی بحالی پر زور دیا ہے۔ امریکی صدر کی جانب سے میانمار پر دوبارہ پابندیاں عائد کرنے کی دھمکی بھی دی گئی ہے جبکہ برطانیہ نے بھی میانمار سے سیاسی رہنماؤں کی فوری رہائی کا مطالبہ کیا ہے۔

خیال رہے کہ میانمارمیں گزشتہ روز فوج نے اقتدار پر قبضہ کر کے ڈی فیکٹو رہنما آنگ سان سوچی سمیت متعدد رہنماؤں کو حراست میں لے لیا تھا۔

گزشتہ روز فوجی حکام نے کہا تھا کہ انتخابات میں فاتح سیاسی جماعت کو ایک سال کی ایمرجنسی کے بعد اقتدار منتقل ہو گا۔ فوج کے زیر انتظام ٹیلی ویژن پر جاری ویڈیو پیغام میں سینئر جنرل کا کہنا تھا کہ اختیارات مسلح افواج کے کمانڈر ان چیف کے سپرد کر دیے گئے ہیں جب کہ ملک میں ایک سال کے لیے ایمرجنسی نافذ کر دی گئی ہے۔


ای پیپر