Police forces, Lahore, protect, citizens, PTI government, CM Punjab Usman Buzdar
02 فروری 2021 (14:38) 2021-02-02

لاہور: (شیخ حماد اسلم) شہر میں بڑھتے کرائم پر قابو پانے کے لئے پولیس افسروں کی کرائم کنٹرول میٹنگز بھی جرائم پیشہ افراد کو نکیل نہ ڈال سکی۔ لاہور میں پولیس کی نت نئی فورسز بھی شہریوں کو تحفظ نہ دے سکیں۔

ذرائع سے موصول ہونے والے سرکاری اعداد شمار کے مطابق نئے سال کے پہلے مہینے جرائم کی ایک ہزار سے زائد وار داتیں ہوئی ، درجنوں افراد کو قتل کر دیا گیا۔ سٹریٹ کرائم اور راہزنی کے 250 سے زائد ، کار و موٹرسائیکل چوری اور چھیننے کے 750 واقعات رپورٹ ہوئے ، ڈکیتی مزاحمت پر تین افراد کو موت کے گھاٹ اتارا گیا۔

اس کے علاوہ دیرینہ دشمنی اور گھریلو جھگڑے پر 28 افراد کو موت کے گھاٹ اتار دیا گیا۔ مختلف علاقوں میں گھروں اور دکانوں سمیت دیگر مقامات پر ڈکیتی کی درجن سے زائد وارداتیں پیش آئیں۔

رپورٹ کے مطابق قتل اور ڈکیتی مزاحمت پر قتل کے 30 سے زائد واقعات رپورٹ ہوئے، 10 ہزار سے زائد مقدمات کا اندراج ہوا ، سنگین جرائم کے ایک ہزار مقدمات درج ہوئے۔


ای پیپر