umer sheikh,Daniel Pearl,murder,case,supreme court,Pakistan,removal,rest house,transferred
02 فروری 2021 (12:38) 2021-02-02

اسلا م آباد :سپریم کورٹ نے ڈینیل پرل کیس قتل کیس میں احمد عمر شیخ کو کال کوٹھڑی سے فوری طور پر نکالنے کا حکم دیدیا ٗ دو روز تک عام بیرک میں رکھا جائے اس کے بعد سخت سکیورٹی میں سرکاری ریسٹ ہائوس منتقل کیا  جائے۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ نے حکم دیا ہے کہ احمد عمر شیخ کے اہل خانہ ریسٹ ہائوس میں صبح 8 سے شام 5 بجے تک اس کے ساتھ رہ سکیں گے۔عمر شیخ کو موبائل فون اور انٹرنیٹ کی سہولت دستیاب نہیں ہو گی۔خاندان کو سرکاری خرچ پر رہائش ٗ ٹرانسپورٹ بھی فراہم کی جائے۔

اٹارنی جنرل نے عدالت کو بتایا کہ عمر شیخ کوئی عام ملزم نہیں بلکہ دہشت گرد وں کا ماسٹر مائنڈ ہے۔رہا کیا تو غائب ہو جائیگا۔جسٹس منیب اختر نے کہا کہ پاک افواج کی قربانیوںسے انکار نہیں لیکن ہم آئین کے پابند ہیں۔

یاد رہے کہ سپریم کورٹ نے گزشتہ سماعت ڈینیل پرل قتل کیس کے ملزم عمر احمد شیخ کی نظر بندی کے حکم امتناع میں  ایک دن کی توسیع کردی۔جسٹس سجاد علی شاہ نے کہاتھا کہ عدالت کو وجوہات بتائیں کہ عمر شیخ کو رہا کیوں نہیں کیا گیا۔


ای پیپر