Nawaz Sharif, absconder, Azizia, Avonfield references
02 دسمبر 2020 (14:23) 2020-12-02

اسلام آباد: اسلام آباد ہائیکورٹ کا نواز شریف کو العزیزیہ اور ایون فیلڈ ریفرنسز میں اشتہاری قرار دینے کا فیصلہ۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعظم نواز شریف کی ضمانت دینے والوں کو نوٹسز جاری کرنے کا بھی فیصلہ۔ عدالت کی جانب سے کہا گیا کہ اشتہاری قرار دینے سے متعلق مختصر تحریری حکمنامہ آج جاری کریں گے۔

واضح رہے کہ عدالت نے نواز شریف کی اپیل کی آئندہ سماعت مریم نواز کی اپیل کے ساتھ مقرر کر دی، جسٹس عامر فاروق نے کہا کہ نواز شریف کی اپیل پر آئندہ سماعت 9 دسمبر کو کرینگے۔

خیال رہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف کی العزیزیہ اور ایون فیلڈ ریفرنسز میں سزا کے خلاف اپیلوں پر سماعت ہوئی جسٹس عامر فاروق اور جسٹس محسن اختر کیانی نے سماعت کی۔ نواز شریف بذریعہ اشتہار طلبی کے باوجود پیش نہ ہوئے جس کے بعد عدالت نے سابق وزیراعظم کو اشتہاری قرار دیدیا۔

العزیزیہ اور ایون فیلڈ ریفرنس میں نواز شریف کی بذریعہ اشتہار طلبی سے متعلق کیس پر سماعت شروع ہوئی تو ڈپٹی اٹارنی جنرل طیب شاہ نے گواہ سے سچ بات کرنے کا حلف لیا۔

سماعت کے دوران دفتر خارجہ کے ڈائریکٹر یورپ مبشر خان کا بیان قلمبند کیا گیا، گواہ مبشر خان نے بتایا کہ میں نے اس عدالت سے جاری نواز شریف کے اشتہارات وصول کیے، انہوں نے کہا کہ میں نے اشتہارات دفتر خارجہ سے لندن میں پاکستانی ہائی کمیشن کو بھیجے۔

ڈائریکٹر یورپ دفتر خارجہ مبشر خان کے پیش کردہ دستاویزات کو عدالتی ریکارڈ کا حصہ بنا دیا گیا، انہوں نے کہا کہ پاکستانی ہائی کمیشن نے 9 نومبر کو دفتر خارجہ کو جواب دیا۔ مبشر خان نے کہا کہ رائل میل کے ذریعے نواز شریف کو اشتہارات کی تعمیل کے حوالے سے بتایا گیا۔

انہوں نے کہا کہ 30 نومبر کو رائل میل کے ذریعے اشتہارات کی تعمیل کی تصدیق شدہ کاپی موصول ہوئی۔


ای پیپر