فیصلہ پہلے کر دیا جاتا تو انتخابات کا نتیجہ بہتر آجاتا : طلال چوہدری
02 اگست 2018 (16:01) 2018-08-02

اسلا م آباد: طلال چوہدری نے کہا ہے کہ اگر میری سزا سے عدالت کا وقار بلند ہوتا ہے تو میں اسے قبول کرتا ہوں، یہ فیصلہ اگر پہلے کردیا جاتا تو میری جماعت انتخابات میں دوسرا امیدوار میدان میں لاسکتی تھی اور اس سے نتیجہ اور بھی بہتر آ سکتا تھا۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے (ن) لیگی رہنما نے کہا کہ اس لٹکتی ہوئی تلوار سے میرے حلقے کے لوگ کنفیوڑ رہے اور میرے مخالفین کو سیاسی فائدہ پہنچایاگیا، فیصلے سے یہ تاثر مضبوط ہوا ہے کہ (ن) لیگ نا انتخاب سے پہلے قبول تھی اور نا ہی اب قبول ہے۔ ہم کرپٹ نہیں صرف ہم اقتدار کے لئے نااہل ہیں۔

یاد رہے کہ آئین کے آرٹیکل 204 کے تحت سابق وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی اور مسلم لیگ (ن) کے دانیال عزیز کو بھی توہین عدالت کا مرتکب قرار دیتے ہوئے انہیں عدالت برخاستگی تک قید اور جرمانہ ہوا تھا۔


ای پیپر